Monday, January 24, 2022  | 20 Jamadilakhir, 1443

طالبان کا ٹیک اوور: افغان ٹی وی پرخواتین کی واپسی

SAMAA | - Posted: Aug 17, 2021 | Last Updated: 5 months ago
Posted: Aug 17, 2021 | Last Updated: 5 months ago

تصویر: افغان اردو ڈاٹ نیوز

افغانستان کے نیوز چینل ‘ طلوع نیوز’ نے طالبان کے افغان اقتدار پرقبضے کے دوسرے دن خواتین اینکرز کے ساتھ اپنی نشریات کا دوبارہ آغاز کردیا ہے۔

طلوع ںیوزنے نہ صرف اپنی نشریات کا دوبارہ سے آغازکیا بلکہ خاتون میزبان نے طالبان میڈیا ٹیم کے ایک رکن کا انٹرویو بھی کیا جس کی تصویر ٹولوہیڈ آف نیوزمراکا پوپل نے ٹویٹ کی۔

میراکا نے لکھا ، ‘ ہماری خاتون پریزینٹراسٹوڈیو میں طالبان میڈیا ٹیم کے رکن کا لائیوانٹرویوکررہی ہیں ‘۔

انہوں نے ٹوئٹرپر کابل اسٹوڈیو میں طالبان ترجمان کے ساتھ گفتگو کرتی میزبان کی کئی تصاویر شیئرکیں۔

لائیو نشریات میں یہ انٹرویو دیکھ کر صحافیوں سمیت سوشل میڈیا صارفین حیرت کا شکار ہوئے۔ بیشتر نے انہوں نے اینکر کی تعریف کرتے ہوئے انہیں ‘ بہادری ، عزم اور لگن کی علامت ‘ کہا۔

طالبان کے ٹیک اوورکے بعد خواتین صحافی صرف اسٹوڈیو سے ہی نہیں بلکہ کابل کی سڑکوں پربھی دلیرانہ رپورٹنگ کررہی ہیں۔ جس سے صحافی ‘ اظہار رائے کی حقیقی آزادی ‘ کیلئے پُرامید ہیں۔

سی این این کی چیف انٹرنیشنل کورسپونڈنٹ کلاریسا وارڈ نے برقعہ پہن کر صدراشرف غنی کے ملک سے بھاگنے اور طالبان کے دارالحکومت میں داخل ہونے سے متعلق رپورٹنگ کی۔ کلاریسا کا کہ ریمارکس دیے کہ ‘میں نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ امریکی سفارت خانے کے باہر طالبان جنگجوؤں کو دیکھوں گی۔

طالبان کے قبضے کے بعد خواتین صحافیوں کے لیے میڈیا کی آزادی خاص طور پر سوشل میڈیا پرزیر بحث رہی ہے۔

ایک نیوز اینکر نے دی گارڈین کو بتایا کہ اس نے افغان خواتین کی آواز بلند کرنے کے لیے برسوں تک کام کیا ، لیکن اس کی کوششیں طالبان کی اقتدار میں واپسی کے ساتھ ٹوٹتی جا رہی ہیں۔

خاتون اینکر کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے میں ہماری زندگی بدل گئی، ہم گھروں تک محدود ہیں اور ہمیں ہرلمحہ موت کا خطرہ ہے۔

طالبان امریکہ اور اس کے مغربی اتحادیوں کی طرف سے وہاں سے نکالے جانے کے 20 سال بعد کابل میں داخل ہوئے ہیں۔ بین الاقوامی نیوز ویب سائٹس کے مطابق توقع ہے کہ وہ امارات اسلامیہ کے دوبارہ قیام کا اعلان کریں گے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube