وزیراعظم عمران خان کے بیان سے جمائما بھی مایوس

SAMAA | - Posted: Jun 23, 2021 | Last Updated: 1 month ago
Posted: Jun 23, 2021 | Last Updated: 1 month ago

فائل فوٹو

وزیراعظم عمران خان کے حالیہ بیان پران کی سابقہ اہلیہ جمائما خان نے بھی اپنی ایک سابقہ ٹویٹ شیئر کرتے ہوئے مایوسی کا اظہارکیا ہے۔

ایچ بی اوایکزیوس کو دیے جانے والے انٹرویو مین میزبان جوناتھن سوان نے پوچھا تھا کہ کیا عورتیں جو کپڑے پہنتی ہیں اس سے معاشرے میں جنسی استحصال بڑھتا ہے جس پر وزیراعظم کاکہنا تھا کہ عورت کم کپڑے پہنے گی تو مردوں پراس کے اثرات پڑیں گے کیونکہ وہ روبوٹ نہیں ہیں۔ یہ اس بات پر منحصر ہے کہ آپ کس معاشرے میں رہتے ہیں۔

جمائما نے اسی حوالے سے عمران خان کا حوالہ دیے بغیر اپنی گزشتہ ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے افسوس ومایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کیپشن میں لکھا ” اور پھر ”۔

جمائما نے 8 اپریل کو کی جانے والی اس ٹویٹ میں لکھا تھا ” مجھے یاد ہے برسوں قبل سعودی عرب میں عبایا اورنقاب میں ملبوس ایک بوڑھی عورت سے متعلق واقعے پرافسوس کا اظہار کیا جارہا تھا کہ جب وہ باہرگئیں تو نوجوانوں نے ان کا پیچھا کرکے ہراساں کیا، چھٹکارا پانے کا واحد راستہ تھا کہ وہ اپنے چہرے سے نقاب ہٹادیں ”۔

جمائما کے مطابق ” مسئلہ یہ نہیں ہے کہ خواتین کیسے کپڑے پہنتی ہیں ”۔

اس سے قبل رواں سال اپریل میں بھی خواتین کیخلاف عصمت دری اور تشدد سے متعلق وزیراعظم کے بیان پرانہیں سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا اور جمائما نے اسی دوران کی جانے والی ٹویٹ کو ری ٹویٹ کیا ہے۔

صحافی جوناتھن سوان نے حالیہ انٹرویومیںوزیراعظم کی ماضی میں کہی گئی بات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آپ نے پاکستان میں جنسی تشدد سے متعلق واقعات کا اقرارکرتے ہوئے کہا تھا کہ بے حیائی کو بڑھایا جائے گا تو اس کے نتائج ہوں گے، اس پرکہا گیا کہ آپ نے زیادتی کا شکارخواتین کو مورد الزام ٹھہرایا، اس حوالے سے آپ کا ردعمل کیا ہے؟

وزیراعظم نے کہا کہ وہ معاشرے میں اشتعال پھیلانے والے عوامل ختم کرنے کیلئے پردے کی بات کررہے تھے کیونکہ ہمارے معاشرے میں ڈسکو یا نائٹ کلب نہیں ہیں تو معاشرے میں جنسی اشتعال بڑھنے پر نوجوانوں کے پاس جائز ذرائع نہ ہوں تو نتائج برے ہوں گے۔

وزیراعظم کے بیان نے سوشل میڈیا پر طوفان کھڑا کردیا

خواتین کے لباس اور ریپ سے متعلق کہی جانے والی بات پرمعروف شخصیات سمیت سوشل میڈیا صارفین کی بڑی تعداد نے بھی مذمت کرتے ہوئے سخت ردعمل ظاہرکیا ۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube