Sunday, September 20, 2020  | 1 Safar, 1442
ہوم   > فیشن ، لائف اسٹائل

کرونا وائرس کے باعث جشن نوروز کی تقریبات منسوخ

SAMAA | - Posted: Mar 20, 2020 | Last Updated: 6 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 20, 2020 | Last Updated: 6 months ago

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر کراچی میں جشن نوروز کی تقریبات بھی منسوخ کردی گئیں۔

کرونا وائرس کے باعث جہاں دنیا کے کئی ممالک میں مکمل لاک ڈاؤن کی صورتحال ہے وہیں پاکستان میں جزوی طور پر لاک ڈاؤن کیا گیا ہے۔

جشن نوروز کے موقع پر مختلف دعائیہ اور سماجی تقاریب کا انعقاد کیا جاتا ہے اور مخصوص پکوان تیار کیے جاتے ہیں، ایران میں یہ تہوار 13 دن تک منایا جاتا ہے۔

پاکستان میں یہ تہوار اسماعلیی ، بوہرہ ، پارسی اور بہائی سمیت مختلف برادریاں مناتی ہے، تاہم اسماعیلی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے ایک فرد نے سماء ڈجیٹل کو بتایا کہ کرونا وائرس کے خدشات کے باعث تمام مذہبی تقریبات اور اجتماعات کو منسوخ کردیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اسماعیلی کمیونٹی ہر سال 21 مارچ کو جشن نوروز کا تہوار مناتی ہے تاہم اس سال احتیاطی اقدامات کے باعث جشن نوروز کی تمام تقریبات منسوخ کردی گئی ہیں، ساتھ ہی تمام جماعت خانے غیر معینہ مددت کیلئے بند کردیئے گئے ہیں۔

پارسی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے ایک شہری نے سماء ڈجیٹل کو بتایا کہ میرا پکوان کا کام ہے تاہم اس بار جشن نوروز کے موقع پر تمام تقریبات منسوخ کردی گئیں ہیں اور ہمارے پاس بھی کوئی آرڈر نہیں، لوگ انفرادی طور پر عبادت کریں گے۔

بہائی کمیونٹی نے بھی نوروز کی تقریبات منسوخ کرکے اپنے اپنے گھروں میں انفرادی طور پر عبادت و دعائی تقریب کے اہتمام کا فیصلہ کیا ہے۔

بہائی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے سماء ڈیجٹل کو بتایا کہ آج یعنی 20 مارچ ان کے 19 دن کے روزے کا اختتام ہوتا ہے جبکہ نوروز کا مطلب نئے بہائی سال کا آغاز ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس تہوار کے دوران کمیونٹی کے احباب دعائیہ تقاریب اور جشن کیلئے اکھٹے ہوتے ہیں، رواں سال کرونا وائرس کے پھلاؤ کے خدشات کے باعث گھروں میں چند افراد کے ساتھ نوروز کی تقریبات کا اہتمام کیا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ سندھ کی جانب سے جاری کردہ احکامات کے بعد نجی و سرکاری تعلیمی ادارے، تمام سرکاری دفاتر، شاپنگ مالز، مارکیٹیں، غیر ضروری دکانوں، تفریحی مقامات سمیت تمام عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube