Friday, August 14, 2020  | 23 Zilhaj, 1441
ہوم   > فیشن ، لائف اسٹائل

جعلی کال پرمعلومات:پرنس ہیری مذاق کا نشانہ بن گئے

SAMAA | - Posted: Mar 11, 2020 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 11, 2020 | Last Updated: 5 months ago

برطانوی اخبارمیں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق شاہی خاندان کے چھوٹے سپوت روس سے تعلق رکھنے والے یوٹیوبرزکے مذاق کا نشانہ بن گئے۔

ہیری سے ان کے اور اہلیہ میگھن مارکل کے برطانوی شاہی خاندان چھوڑنے کے فیصلے کے حوالے سے بات کی جا رہی تھی لیکن شہزادے کو یہ محسوس کرایا گیا کہ وہ ماحولیاتی تحفظ کیلئے کام کرنے والی سویڈن کی گریٹا تھونبرگ اور ان کے والد سے بات کر رہے ہیں۔

یہ غیرمعمولی جعلی کالز نئے سال کی شام اور22 جنوری کو ریکارڈ کی گئی تھیں۔ پرینک اسٹارز ولادیمیر کزنتسوف اور الیکسی اسٹولیاروف جنہیں ووون اور لیکسس کہا جاتا ہے، کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے 35 سالہ ہیری سے کینیڈا میں 2 بار لینڈ لائن پربات کی۔

بکنگھم پیلس سے تاحال اس حوالے سے کیا جانے والا کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا ہے لیکن اس خبرکی حقیقت سے انکارنہیں کیاجاسکتا۔

یہ کالز پرینک اسٹارزکے یوٹیوب چینل پردستیاب نہیں تھیں تاہم برطانوی اخبار میں شائع ہونے والی رپورٹ میں معاملے کو تفصیل سے بیان کیا گیا ہے۔

آڈیو کال میں ہیری نے کہا کہ برطانیہ چھوڑنامیرے اور میگھن کیلئےیقینی طور پر آسان نہیں تھا لیکن ہمارے خاندان کیلئے اور میرے بیٹے کی حفاظت سے متعلق صحیح فیصلہ تھا۔ “مجھے لگتا ہے کہ دنیا میں ایسے بہت سے لوگ ہیں جو سب سے پہلے فیملی کو ترجیح دینے کیلئے ہمارا احترام کرسکتے ہیں۔ ہاں یہ مشکل چیز ہے لیکن ہم ایک نئی زندگی کا آغاز کریں گے”۔

گریٹا کا والد بن کر ہیری سے بات کرنے والے یوٹیوبرنے پوچھا کہ اگرعام گزاری جانے والی زندگی شاہی زندگی سے بھی خراب ہوئی تو ؟ جس پر ہیری نے کہا کہ نہیں، مجھے لگتا ہے یہ بہت بہتر ہے۔ شہزادے نے فوج میں گزارے گئے 10 سال کاحوالہ دیتے ہوئے کہا کہ مختلف پوزیشن میں رہنا ہمیں وہ کرنے کی صلاحیت فراہم کرتا ہے جو ہم نہیں کرسکتے تھے۔

جعلی گریٹا نے ہیری سے میڈیا کے سامنے درپیش دباؤ سے متعلق بھی پوچھا جس پر ان کا کہنا تھا کہ اس لمحے نے جب سے مجھے ایک مضبوط بیوی کا ساتھ ملا جو ایسے معاملات کیلئے ان کے سامنے کھڑی ہوسکتی ہے، میڈیا کو خوفزدہ کیا ہے اور وہ ناقابل یقین حد تک ناراض بھی ہوئے ہیں۔ وہ ہماری ساکھ کو تباہ کرنے کی کوشش کریں گے اور ہمیں ڈبوئیں گے۔ لیکن جو بات وہ نہیں سمجھتے وہ یہ ہے کہ جو جنگ ہم ان کیخلاف لڑ رہے ہیں وہ اس سے کہیں زیادہ ہے۔

اپنے تئیں گریٹا اور اس کے والد سے بات کرنے والے ہیری نے حوصلہ افزائی کیلئے یہ بھی کہا کہ یہ بھی کہا کہ بدقسمتی سے دنیا کی قیادت چند ببیمار ذہنیت کے لوگوں کی طرف جارہی ہے،آپ اور نوجوان نسل ہی مثال قائم کرسکتی ہے۔

فون پر بات چیت کے دوران ہیری نے ماحولیات کیلئے گریٹا کی خدمات مدنظررکھتے ہوئے امریکی صدر کی ایندھن پالیسی پربھی تنقید کی۔

اس آڈیو کال کے حوالے سے تبصرہ کرتے ہوئے ایگزیکٹوڈائریکٹر سن نے شاہی خاندان چھوڑنے کے فیصلے سے متعلق ہیری کے ذہن میں پائی جانے والی دلچسپ پہلو کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس نے یہ خیال ختم کردیا کہ اس تمام صورتحال میں پردے کے ہپیچھے سے ڈوریاں دراصل میگھن ہلا رہی تھیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube