ہوم   > فیشن ، لائف اسٹائل

برطانوی شاہی جوڑے کی آمدسےقبل سیکیورٹی وفدپاکستان آئیگا

7 days ago

برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان آمد سے قبل شہزادہ ولیم اور کیٹ مڈلٹن کی سیکیورٹی کے لیے مسلح اہلکاروں کا دستہ اسلام آباد پہنچے گا۔

برطانوی ذرائع ابلاغ سے جاری خبروں کے مطابق ڈیوک اینڈ ڈچز آف کیمبرج کے دورے سے پہلے برطانوی افسروں کی ٹیم پاکستان پہنچ جائے گی اور سیکیورٹی افسر شہزادہ اور شہزادی کے روٹس کی چیکنگ کریں گے۔

سیکورٹی اہلکاروں کی جانب سے ایئر فیلڈز، مقامات اور روٹس کو چیک کیا جائے گا، جہاں شہزادہ اور شہزادی جائیں گے۔ ایڈوانس سیکیورٹی چیکس معمول کی بات ہے، لیکن برطانوی مسلح پولیس اہلکاروں کی تعیناتی غیر معمولی بات ہوگی۔

کسی بھی غیر معمولی صورت حال کے تناظر اور سیکیورٹی خدشات کے باعث مسلح سیکیورٹی وفد کو تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس تمام آپریشن کی نگرانی برطانوی ہائی کمیشن سے کی جائے گی۔

واضح رہے کہ اس سے قبل رواں سال 29 جون کو برطانوی شاہی جوڑے کی پاکستان آمد کا اعلان کیا گیا تھا، تاہم شاہی محل کی جانب سے دورے کی مزید تفصیلات سامنے نہیں لائی گئیں۔

کینگسٹن پیلس کی جانب سے جاری بیان کے مطابق ڈیوک اینڈ ڈچز آف کیمبرج پاکستان کا دورہ دفتر خارجہ کی دعوت پر کر رہے ہیں، تاہم اس بات کا ذکر نہیں کیا گیا کہ آیا تینوں بچے بھی معزز مہمانوں کے ہمراہ ہونگے یا نہیں۔ برطانوی شاہی جوڑے کا یہ پہلا پاکستان کا دورہ ہوگا، تاہم وہ اس سے قبل سال 2016 میں بھارت کا دورہ کر چکے ہیں۔

دونوں کے دورے کے اعلان کے بعد کچھ بیانات سے بظاہرہ یہ لگتا ہے کہ شہزادہ اور شہزادی کے ہمراہ ان کا بیٹا آرچی جس کی پیدائش 6 مئی کو ہوئی ہے، ان کے ساتھ ہوگا، تاہم کسی ذرائع سے فی الحال اس کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

شہزادہ ولیم تاج برطانیہ کے دوسرے ولی عہد ہیں، وہ شہزادہ چارلس اور لیڈی ڈیانا کے بڑے بیٹے ہیں، شہزادہ ولیم سے پہلے ولی عہد شہزادہ چارلس اور ڈچز آف کارنوال سن 2006 ءمیں پاکستان آچکے ہیں۔

شہزادہ ولیم کی والدہ لیڈی ڈیانا بھی اپنی چیئریٹی خدمات کے سلسلے میں پاکستان کا دورہ کرچکی ہیں، دورے میں انہوں نے کینئرڈ کالج کا دورہ بھی کیا تھا۔

 

ملکہ برطانیہ خود بھی 1961ء اور 1997ء میں پاکستان کا دورہ کرچکی ہیں۔ شہزادہ ولیم اور اہلیہ کیٹ مڈلٹن کی جانب سے دورہ پاکستان ترتیب دیے جانے کا خیر مقدم کرتے ہوئے پاکستان ہائی کمشنر کا کہنا تھا کہ پاکستان کی حکومت اور عوام ان کے استقبال کے منتظر ہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ شاہی جوڑے کا دورہ برطانیہ پاکستان تعلقات کی عکاسی کرے گا ، پاکستان اور برطانیہ کے تاریخی روابط ہیں جنہیں دونوں مزید مستحکم کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں