ہوم   > فیشن ، لائف اسٹائل

عجيب و غريب وجوہات پر ہونے والی طلاقیں

2 weeks ago

مختلف ممالک ميں ہونے والی مشہور طلاقیں



چند روز قبل يو اے ای کی خاتون نے شوہر کی اچھائيوں سے تنگ آکر طلاق لے لی تھی اور موقف اپنايا تھا کہ شوہر بہت پیار کرتا ہے، کچھ کہے بغیر ہی گھر کی صفائی شروع کرديتا ہے۔ کھانا بھی پکاتا ہیں، کچھ کہنے کا موقع ہی نہیں ديتا نہ ہی کوئی بحث کرتا ہے ليکن آج ہم آپ کو مختلف ممالک ميں عجيب و غريب وجوہات پر طلاق سے متعلق بتائيں گے۔


یوں تو اکثرجھگڑوں، ذاتی ناپسندیدگی اور محبت نہ ہونے کے باعث شادی شدہ جوڑوں کو الگ ہوتے دیکھا گیا ہے لیکن دو ہزار سولہ ميں سعودی جوڑے کی شادی محض دو گھنٹے ہی چل سکی کيونکہ بيوی نے موبائل فون ايپ اسنيپ چيٹ پر تصاوير شيئر کی تھيں۔


اسی سال شارجہ ميں شوہر نے بيوي کو بغير ميک اپ ديکھ کر طلاق ديدی، چونتيس سالہ نوجوان تیراکی کے لئے اپنی بیوی کو بیچ پر لے گیا جہاں تیراکی کے بعد جیسے ہی دلہن کا میک اترا تو شوہر نے اس کا اصل چہرہ دیکھ کر شور مچا دیا اورفوراً طلاق دیدی۔


جولائی دو ہزار سترہ ميں تائيوان کی خاتون نے موبائل فون پر ميسج کا جواب نہ دينے والے شوہر سے راہيں جدا کرليں۔


جون دو ہزار چودہ ميں تو برطانوی خاتون نے حد ہی کردی، اينيميٹڈ فلم فروزن ديکھتے ہوئے شوہر سے عليحدگی اختيار کرلی، قصور صرف اتنا تھا کہ شوہر کو فلم پسند نہ آئي جس پر بيوی نے موقف اپنايا کہ شوہر ميں انسانیت کی کمی لگتی ہے۔


دو ہزار بارہ ميں نائيجيرين خاتون نے شوہر سے اس ليے طلاق لے لی کيونکہ وہ بيچارہ بہت باتيں کرتا تھا۔


اپريل دو ہزار سترہ ميں اٹلی کے نوجوان کو بيوی کے سونے کا انداز پسند نہ آيا اور ڈر کے مارے طلاق لے لی، شوہر کا کہنا تھا کہ بيوي کے سونے کا انداز انتہائي مشکوک ہے۔


 
 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں