معروف ماڈل صحیفہ جبار شادی کے بندھن میں بندھ گئیں

December 6, 2017

لاہور : معروف پاکستانی ماڈل صحیفہ جبار خٹک نے پرانی دوستی کو نیا رنگ دیتے ہوئے اپنے عزیز دوست کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوگئیں، ماڈل صحیفہ جبار اور ان کے قریبی دوست خواجہ خضر حسین کی شادی لاہور میں ہوئی جس میں ماڈل صدف کنول، رباب علی، ایمن سلیمان، رحمت اجمل، انعم ملک، ایمن اور منال سمیت دیگر فنکاروں نے شرکت کی۔

تفصیلات کے مطابق ہلکے گلابی رنگ کے لہنگے اور چولی میں ملبوس، چہرے پر گھونگٹ کے بجائے چھوٹا سا ٹیکہ، ادھر اُدھر چہل پہل کرتی روایتی دلہن سے یکسر مختلف یہ ہیں صحیفہ جبار، جو گزشتہ روز اپنے قریبی دوست کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئیں۔

آج کل کے شو آف معاشرے میں صحیفہ نے سادہ اور پروقار شادی کی تقریب کا اہتمام کرکے یہ بات غلط ثابت کردی کہ ہر شوبز شخصیت پیسے کی چکا چوند دکھانے کا شوق رکھتی ہے۔ تقریب میں مدعو مہمانوں کیلئے بھی لباس سے متعلق خاص تھیم رکھی گئی تھی، جس کیلئے ہلکے رنگوں کا انتخاب تھا۔

ماڈل صدف کنول اور دیگر شرکاء نے بھی اپنی بھرپور صلاحتوں کا مظاہرہ کرتے ہوئے رقص میں حصہ لیا۔

صحیفہ کا کہنا تھا کہ بہت زیادہ بڑے پیمانے پر اور مہنگی شادی مجھے پسند نہیں، اسی لیے صرف سفید پھولوں کا انتخاب کرتے ہوئے دن کے وقت میں شادی کا اہتمام کیا۔

شادی کی ایک اور خاص بات مہمانوں کی جانب سے دلہن کیلئے بنائی گئی خاص ’جیکٹ‘ تھی۔

ان جیکٹس پر مہمانوں نے اپنے خیالات اور جذبات کا اظہار کرتے ہوئے ایک جملہ لکھا، کسی جیکٹ پر ’میری ساس نہیں چاہتی کہ میں بدلوں‘ لکھا تھا تو کسی پر ’نہیں! میرے شوہر مجھے میرے خواب پورے کرنے سے نہیں روکتے‘ اور اس جیسے مختلف جملے تحریر تھے۔

دوسری قابل ذکر بات یہ ہے کہ خضر’ شیعہ‘ اور صحیفہ ’سنی‘ ہیں تاہم اس بات پر دونوں کو کوئی اعتراض نہیں۔ صحیفہ کا کہنا ہے کہ ان کے بچے انسانیت کو ترجیح دیں گے نہ کہ شیعہ یا سنی ہونے کو۔

 

#khawajasaab aur unki Zoja #saheefajabbarkhattak

A post shared by Saheefa Jabbar Khattak (@saheefajabbarkhattak) on Dec 5, 2017 at 7:46am PST

 

 

انہوں نے مزید کہا کہ ان کو باورچی خانے میں جانا قطعی پسند نہیں جبکہ مزے کی بات یہ ہے کہ ان کی ساس کو بھی صحیفہ ایسے ہی پسند ہیں اور وہ نہیں چاہتیں کہ ان کی بہو میں کسی قسم کی تبدیلی آئے۔ سماء

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.