ثقافتی رنگوں میں رنگے فن پارے، توجہ کا مرکز

By: Samaa Web Desk
March 20, 2017

اسلام آباد: بیلجیئم کے ثقافتی رنگوں میں رنگے فن پارے سب کی توجہ کا مرکز بن گئے۔

ایک کاغذ پر کچھ الفاظ کچھ رنگ کچھ خاکے اور پوری کہانی بیان یہ کامک آرٹ کی خاص زبان ہے، انیس سو بیس کی دہائی میں بیلجیم سے نکل کر یورپ بھر میں مقبول ہونے والا کومک آرٹ جس میں تاریخ کے حوالے بھی طنز کے تڑکے بھی سبق آموز مٹھاس بھی ہے۔

بیلجیئن سفیر کہتے ہیں اپنی ثقافتی سوغات محبتیں بڑھانے کیلیے پاکستانیوں کو پیش کررہے ہیں، یہ ہماری ثقافت کا حصہ ہے، ہم مزاح کا تبادلہ کرتے ہیں جس سے دوست احباب میں قہقہے پھوٹتے ہیں۔

نمائش دیکھنے والے بھی بہت خوش ہیں کہتے ہیں ایک دوسرے کے ثقافتی جھروکوں میں جھانکنے سے دوریاں اپنائیت میں سمٹ آتی ہیں ۔

بیلجیم کامک اسٹرپ کے رنگ اسلام آباد کے بعد لاہور اور کراچی میں بھی چھائیں گے، ایک صدی سے مقبول تر ہوتا کومک آرٹ بیلجین ثقافت کا ترجمان بھی ہے اور طنزومزاح کے ساتھ ساتھ تلخ و شیریں تاریخ کا عکاس بھی ہے۔ سماء

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.