Tuesday, October 20, 2020  | 2 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

کراچی میں کرنٹ لگنے سے جاں بحق افراد کی تعداد 19 ہوگئی

SAMAA | - Posted: Jul 31, 2019 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Jul 31, 2019 | Last Updated: 1 year ago

کراچی میں بارش کے باعث صرف تین روز ميں کرنٹ لگنے کے واقعات میں اب تک 19 افراد جاں بحق ہوگئے۔

نارتھ ناظم آباد بلاک ایل ميں کرنٹ لگنے سے دو بچے جاں بحق ہوئے۔ محمد احمد اورعبير بارش کے بعد سائيکل پر کھیلنے نکلے تھے کہ کے اليکٹرک کے پول سے کرنٹ لگ گيا۔ دونوں بچے ايک گھنٹے تک پول سے چمٹے رہے مگر کوئي مدد کو نہ آيا۔

اہل محلہ کا کہنا ہے کہ تار ٹوٹنے اور پول ميں کرنٹ آنے کي شکايت پہلے کرچکے تھے۔

سرجاني يوسف گوٹھ ميں 20 سالہ عاطف اور اجمير نگري ميں 9 سالہ معصومہ بجلي کے پول کے قريب گئے تو کرنٹ لگنے سے انتقال کرگئے۔

کراچی میں بارشوں کا سلسلہ جاری، کرنٹ لگنے سے 14 افراد جاں بحق

لانڈھي معين آباد ميں کرنٹ لگنے سے ايک شخص جاں بحق ہوا جبکہ قائدآباد ماروی گوٹھ میں 28 سالہ محمد بخش جاں بحق ہوگیا۔

اسکے علاوہ نارتھ کراچي، کھارادر، گلشن اقبال، کالاپل اور ديگرعلاقوں ميں کرنٹ لگنے کے مختلف واقعات ميں 15 شہريوں کي جانيں جا چکي ہيں۔

دوسری جانب سپرہائي وے پر کے اليکٹرک کے گرڈ اسٹيشن ميں پاني داخل ہوگيا جس پر حکام نے شہر کے 50 فيصد حصے کو بجلي بند ہونے کي وارننگ دے دی۔ پاک فوج کے دستے ہيوي مشينري کے ساتھ نکاسي آب کے کام ميں مصروف ہيں اور گرڈ اسٹيشن ميں پاني کو ڈي واٹرنگ پمپ کے ذريعے نکال رہے ہيں۔

پاک فوج نے رات بھر ہیوی مشینری سے 90 فیصد پانی سعدی ٹاون جانے سے روک لیا لیکن پانی پھر بھی سعدی ٹاون کے بلاک فائیو اور سیون میں داخل ہوگیا۔ سعدی ٹاون میں پانی داخل ہونے کے بعد پاک فوج کے دستوں نے مٹی کی رکاوٹیں بنا کر مزید پانی بڑھنے سے روک دیا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube