پشاور، کم وزن روٹی فروخت کرنے والوں کیخلاف کارروائی ہوگی

July 15, 2019

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے ضلعی انتظامیہ کو پشاور میں کم وزن کی روٹی بیچنے والوں کیخلاف کارروائی کی ہدایت کردی۔

پشاور میں نانبائی ایسوسی ایشن کی ہڑتال کے بعد ضلعی انتظامیہ نے 190 گرام روٹی کی قیمت 15 روپے مقرر کی تھی ۔

نانبائیوں کے مطالبے پرروٹی کے نرخ تو بڑھ گئے لیکن اس کے باوجود پشاور میں کم وزن کی روٹی فروخت کی جا رہی ہے۔

شہریوں کی جانب سے شکایات پر سی ایم ہاؤس میں ضلعی انتظامیہ اورمحکمہ خوراک کا اجلاس طلب

کیا گیا جہاں وزیراعلیٰ محمود خان نے خلاف ورزی کرنے والے نانبائیوں کے خلاف سخت کارروائی کے احکامات جاری کردیے۔

وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ 190 گرام سے کم روٹی 15 روپے میں فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے، ناجائز منافع خوری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔

یاد رہے کہ دو روز قبل پشاور کے نانبائیوں اور انتظامیہ کے مابین مذاکرات میں روٹی کی قیمت میں 5 روپے اضافے کا فیصلہ ہوا تھا۔ معاہدے کی مطابق نانبائی 190 گرام کی روٹی 10 کے بجائے 15 روپے میں فروخت کریں گے۔

دریں اثنا نان بائی ایسوسی ایشن کے صدر نئے نرخنامے پر بھی نا خوش ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ روٹی کی قیمت 15 روپے سے مزید بڑھائی جائے یا پھر وزن میں کم کیا جائے۔