ہوم   > Latest

نیب نے درخواست ضمانت مسترد ہونے پر آصف علی زرداری کو گرفتار کرلیا

6 months ago

اسلام آباد ہائی کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد کر دی، جس کے بعد نیب نے سابق صدر کو گرفتار کر لیا۔ آصف زرداری محفوظ شدہ فیصلہ سننے سے قبل ہی عدالت سے روانہ ہوگئے تھے۔ نیب کی ٹیم آصف...

اسلام آباد ہائی کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری کی عبوری ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد کر دی، جس کے بعد نیب نے سابق صدر کو گرفتار کر لیا۔ آصف زرداری محفوظ شدہ فیصلہ سننے سے قبل ہی عدالت سے روانہ ہوگئے تھے۔

نیب کی ٹیم آصف علی زرداری کو بلٹ پروف گاڑی میں لے کر نیب راولپنڈی پہنچی۔ آصف زرداری کا طبی معائنہ کرنے کےلیے تین رکنی میڈیکل بورڈ تشکیل دے دیا گیا ہے، ميڈيکل ٹيم ميں پولی کلینک کے ڈاکٹرز بھی شامل ہیں۔ ڈاکٹر آصف عرفان، کارڈيالوجسٹ ڈاکٹر احمد اور ڈاکٹر امیتاز میڈیکل بورڈ کا حصہ ہیں۔

پولیس کی بھاری نفری نیب آفس کے باہر تعینات ہیں، جبکہ نیب راولپنڈی آفس آنے والے راستے سیل کر دیے گئے۔ نیب راولپنڈی میں زرداری کو ٹھہرانے کے انتظامات مکمل کر لیے گئے۔

اپوزیشن کا آصف زرداری کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا مطالبہ

عید کی چھٹیاں ختم ہونے کے بعد عبوری ضمانت کی مدت ختم ہونے پر آصف زرداری اور فریال تالپور آج اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیش ہوئے، جہاں جسٹس عامر فاروقي اور جسٹس محسن کياني پر مشتمل دو رکني بنچ نے فيصلہ سنايا۔ عدالت کی جانب سے آصف زرداری اور فریال تالپور سمیت ديگر تمام ملزمان کي ضمانتیں بھي مسترد کی گئی ہیں۔

اسپیکر قومی اسمبلی نے ہدایت کی ہے کہ نیب ٹیم کو پارلیمنٹ ہاؤس کے اندر داخل نہ ہونے دیا جائے، کیونکہ نیب ٹیم آصف زرداری کو پارلیمنٹ ہاؤس کے اندر سے گرفتار نہیں کرسکتی۔ اسپیکر کی ہدایت کے بعد پارلیمنٹ ہاؤس کے تمام داخلی دروازوں پر سیکیورٹی الرٹ کی گئی۔

آصفہ بھٹو نے والد کو گرفتاری سے قبل گلے لگایا

منی لانڈرنگ کیس میں چیئرمین نیب کی منظوری سے آصف زرداری کے وارنٹ گرفتاری پہلے ہی جاری کیے جا چکے تھے، اس لیے درخواست مسترد ہونے کے بعد نیب کی سات رکنی ٹیم سابق صدر کو گرفتار کرنے کیلئے زرداری ہاؤس پہنچی تھی۔ نيب کا کہنا تھا کہ قانون کے مطابق گرفتاری عمل میں لائیں گے۔

وکیل فاروق ایچ نائیک نے دلائل میں نیب کی مبینہ بدنیتی پر بات کی۔ نیب پراسیکیوٹر نے سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں درخواستوں کو ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کرنے کی استدعا کی۔ عدالت نے درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا تھا جسے کچھ دیر بعد سنایا گیا۔

آصف زرداری کی گرفتاری کے بعد سکھر، لاڑکانہ میں دکانیں بند

سابق صدر کی ہمشیرہ فریال تالپور کی درخواست ضمانت بھی مسترد کی گئی ہے تاہم ان کی گرفتاری سے متعلق ابھی فیصلہ نہیں کیا گیا، فریال تالپور کے وارنٹ گرفتاری تاحال جاری نہیں کیے گئے۔

پیپلز پارٹی نے آصف زرداری کی ممکنہ گرفتاری کی صورت میں احتجاج کا فیصلہ بھی کیا ہے۔ اسکے علاوہ پارٹی نے آج شام 7 بجے اہم اجلاس اسلام آباد ميں طلب کر لیا، جس میں سپریم کورٹ سے رجوع کرنے یا گرفتاری کا فيصلہ ہوگا۔

آصف زرداری کی گرفتاری کے بعد پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے سکھر اور لاڑکانہ سمیت دیگر شہروں میں زبردستی دکانيں بند کروا دیں، جبکہ پولیس سے بدتمیزی بھی کی گئی۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں