Friday, January 28, 2022  | 24 Jamadilakhir, 1443

یورپ اپنی حد میں رہے ورنہ نتائج خطرناک ہوں گے، روسی صدر

SAMAA | - Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 2, 2021 | Last Updated: 2 months ago

روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے یوکرین اور نیٹو رکن ممالک کی طرف سے فوجی مشقوں اور صف بندیوں کو ملکی سلامتی کے لیے خطرہ قرار دیتے ہوئے یورپ کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنی حد سے تجاوز نہ کرے ورنہ خطرناک نتائج برآمد ہوں گے۔

روسی میڈیا کے مطابق صدر پیوٹن نے واضح کیا کہ اگر امریکا اور نیٹو عسکری اتحاد نے یوکرین میں میزائل نظام نصب کیا تو روس جوابی کارروائی پر مجبور ہو جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ یوکرین میں نصب کیے گئے میزائل نظام سے ماسکو کو چند منٹوں میں ہی نشانہ بنا جا سکے گا اس لیے یہ اقدامات کریملن کے لیے ریڈ لائنز ہیں۔ روسی صدر نے بعض ممالک کے رویے پر بھی اپنی تشویش کا اظہار کیا جو روس کی مغربی سرحدوں کے قریب کشیدگی کو بڑھاتے رہتے ہیں۔

ولادیمیر پیوٹن کا کہنا تھا کہ کچھ ممالک ہماری ترقی کو روکنے کے  لیے پابندیوں کی صورت میں دباؤ ڈالنے اور ہماری سرحدوں پر کشیدگی کو ہوا دینے جیسے ہتھکنڈوں کا سہارا لیتے ہیں۔

انہوں نے تجویز دی کہ روس فریقین کے ساتھ معاملات کے پرامن حل کے لیے بات چیت کے لیے تیار ہے۔

دوسری جانب امریکی وزیرخارجہ کا کہنا ہے کہ ایسے شواہد ملے ہیں کہ روس اپنے پڑوسی ملک یوکرین کے خلاف فوجی کارروائی کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔ انہوں نے روس کو متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس کا بھرپور جواب دیا جائے گا۔

امریکی وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ ہمیں اس بات پر سخت تشویش ہے کہ روس یوکرین کے خلاف جارحانہ کارروائیوں کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔ وہ یوکرین کے خلاف بڑے پیمانے پر فوجی کارروائی کے ساتھ اس کو داخلی طور سے غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube