Wednesday, January 19, 2022  | 15 Jamadilakhir, 1443

افغان وزیراعظم کی عالمی برادری سے مدد کی اپیل

SAMAA | - Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 29, 2021 | Last Updated: 2 months ago

افغانستان میں عبوری حکومت کے وزیرِ اعظم ملا حسن آخوندزاد نے عالمی برادری اور رفاہی اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ افغانستان کی مدد کریں ورنہ بھوک اور افلاس کے باعث ملک مزید مشکلات سے دوچار ہو سکتا ہے۔

ہفتہ کے روز افغان عوام سے اپنے پہلے خطاب میں ملا حسن کا کہنا تھا کہ افغانستان اب ہمسایہ ممالک سمیت دنیا کے کسی ملک کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہیں کرے گا۔

ملا حسن آخند نے افغان عوام کو صبر کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پہلی ترجیح افغان عوام کو مشکلات سے نکالنا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ افغان عوام کی ان مشکلات کو طالبان کے ساتھ نہیں جوڑنا چاہیے۔

افغان وزیراعظم نے واضح کیا کہ طالبان نے کسی کے ساتھ معاش کی بہتری کے وعدے نہیں کیے تھے بلکہ رزق دینے والی ذات تو اللہ کی ہے اس لیے آئیں سب مل کر دعا کریں کہ اللہ تمام افغان شہریوں کی حالت پر رحم و کرم کرتے ہوئے آسانیاں پیدا کرے۔

عوام سے خطاب کے دوران ملا حسن کا کہنا تھا کہ ان کی حکومت میں تمام دھڑوں اور قوموں کی نمائندگی ہے۔ خواتین کے حقوق کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ انہیں مکمل تحفظ حاصل ہے اور ان کے دور حکومت میں انہیں کوئی آنکھ اٹھا کر بھی نہیں دیکھ سکتا۔ اس کے ساتھ ساتھ بڑی حد تک خواتین کے تعلیمی ادارے ملک بھر میں کھل چکے ہیں۔

خیال رہے کہ کابل کا کنٹرول سنبھالے طالبان کو 3 ماہ سے زائد کا عرصہ ہو چکا ہے تاہم عالمی برادری کی جانب سے طالبان کی حکومت کو ابھی تک کسی ایک ملک نے بھی تسلیم نہیں کیا ہے۔ عالمی برادری طالبان پر جامع حکومت کے قیام، خواتین کے حقوق اور عالمی برادری کے ساتھ کیے گئے وعدوں کی تکمیل پر زور دے رہی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube