Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

اسرائیل کی متحدہ عرب امارات کیساتھ تاریخ کی سب سےبڑی فوجی مشقیں

SAMAA | - Posted: Oct 27, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 27, 2021 | Last Updated: 1 month ago

اسرائیلی تاریخ کی سب سے بڑی فضائی مشقوں کا جائزہ لینے کیلئے دنیا بھر سے 11 ممالک کے ایئر فورس چیفس اسرائیل پہنچ گئے ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کے مطابق متحدہ عرب امارات کی فضائیہ کے سربراہ بھی ان دنوں اسرائیل میں موجود ہیں۔

اسرائیل رواں ہفتے اپنی سب سے بڑی فضائی مشق کا اہتمام کر رہا ہے ، جس میں کئی مغربی ممالک اور بھارت بھی شرکت کریگا۔

متحدہ عرب امارات کی فضائیہ کے سربراہ کمانڈر ابراہیم ناصر محمد العلوی بھی مشقوں کا معائنہ کرنے کے لیے اسرائیلی دارالحکومت میں موجود ہیں۔

اسرائیلی فضائیہ کے آپریشن کے سربراہ امیر لازار نے صحافیوں کو بتایا کہ مشقیں ’’ایران کیخلاف نہیں، لیکن فوجی حکام نے کہا ہے کہ ایران اسرائیل کا سب سے بڑا اسٹرٹیجک خطرہ اور اس کی زیادہ تر فوجی منصوبہ بندی کا مرکز ہے۔

مشقوں کو بلیو فلیگ کا نام دیا گیا ہے، جو اسرائیلی پرچم سے منسلک ہے۔ یہ مشقیں اسرائیلی صحرائی علاقے نیگیف میں منعقد کی جائیں گی۔ نیگیف ہیبرو زبان کا لفظ ہے، جس کے معنیٰ خشک زمین ہے۔ مشقوں میں شامل کچھ ممالک پہلی بار حصہ لے رہے ہیں۔

مشقوں میں 80 جنگی طیارے ، جب کہ 1 ہزار 500 غیر ملکی عملہ اس کا حصہ ہونگے۔ ان اسرائیلی فضائی مشقتوں میں متحدہ عرب امارات پہلی بار حصہ لے رہی ہے۔ دیگر ممالک میں جاپان، رومانیہ، فن لینڈ، نیدر لینڈز، آسٹریلیا، ساؤتھ کوریا، کروشیا وغیرہ شامل ہیں۔

امریکا کا جدید ترین ایف 35 اسٹیلتھ ٹیکنالوجی کا حامل طیارہ بھی ان مشقوں کا حصہ ہوگا، جو ان دنوں مشقوں میں حصہ لینے کیلئے اسرائیلی ایئر فورس بیس نیواٹم پر موجود ہے۔ لاک ہیٹ مارٹن کا تیار کردہ یہ ایک سنگل سیٹر، سینگل انجن طیارہ ہے، جو ہر طرح کے موسم میں آپریشنل مشن سر انجام دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

بھارت کی جانب سے اس سے قبل مشقوں میں حصہ لینے کیلئے صرف فوجی کارگو طیارہ بھیجا جاتا تاہم اس سال بھارتی فضائیہ کے لڑاکا طیارے بھی بھیجے گئے ہیں۔ مشقوں کو دو ٹیموں میں تقسیم کیا گیا ہے، جس میں بلیو ٹیم اور سرخ ٹیم شامل ہے۔ ان مشقوں میں صحرائی زمین کو ایک ڈریگ لینڈ فرض کرکے مشقوں کا انعقاد کیا گیا ہے۔ مشقوں میں لڑاکا طیاروں کے ساتھ ساتھ، ہیلی کاپٹرز، میزائل سسٹم، زمین سے فضا میں مار کرنے والے ہتھیار اور میزائل اور ڈرونز بھی استعمال ہونگے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube