Friday, December 3, 2021  | 27 Rabiulakhir, 1443

نومسلم جرمن خاتون کو 10برس قید کی سزا

SAMAA | - Posted: Oct 26, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Oct 26, 2021 | Last Updated: 1 month ago
German ISIS Woman

فوٹو: اے ایف پی

جرمنی کی مقامی عدالت نے گزشتہ روز نومسلم جرمن خاتون کو غلام بچی کے قتل میں ملوث ہونے کے جرم میں 10 سال قید کی سزا سنا دی۔

جرمن ویب سائٹ ڈوئچے ویلے کے مطابق جرمن خاتون نے اسلام قبول کرنے بعد داعش میں شامل ہوگئی تھی۔ خاتون پر ایک ایزدی بچی کے ہلاک ہونے میں ملوث ہونے کا جرم ثابت ہوا ہے۔

خاتون کی شناخت مخفی رکھی گئی ہے اور صرف نام کی تفصیل میں جینیفر ڈبلیو بتایا گیا ہے، جس کی عمر 33 برس ہے۔

خاتون اور اس کے سابق شوہر طحہٰ الجمیلی، جو داعش کا رکن بھی تھا، نے 5 سالہ بچی کو خرید کر غلام بنا کر بھوکا اور پیاسا رکھا تھا۔ اس اذیت کی وجہ سے ہی بچی دم توڑ گئی تھی۔

عدالت میں استغاثہ کی جانب سے جو دستاویزی ثبوت جمع کرائے گئے ہیں ان کے مطابق یہ خاتون داعش کی مددگار ہونے کے ساتھ اقدام قتل کی کوششوں میں بھی شامل تھی۔ یہ خاتون جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم میں بھی ملوث رہی ہے۔

جینیفر ڈبلیو کو جرمن حکام نے سن 2018 میں اس وقت گرفتار کیا جب وہ شام سے واپس اپنے ملک میں داخل ہونے کے لیے روانہ ہوئی تھی۔

خاتون کے شوہر کو 2019 میں یونان میں گرفتار کیا گیا تھا اور اس پر فرینکفرٹ میں مقدمہ چل رہا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube