Friday, December 3, 2021  | 27 Rabiulakhir, 1443

قندھار: نمازجمعہ کے دوران مسجد میں دھماکا،40افرادجاں بحق،70 زخمی

SAMAA | - Posted: Oct 15, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 15, 2021 | Last Updated: 2 months ago

افغانستان کے شمالی شہر قندھار میں نماز جمعہ کے دوران مسجد میں دھماکے کے نتیجے میں 40 افراد جاں بحق جبکہ 70 نمازی زخمی ہوگئے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ مسجد میں ایک نہیں بلکہ بیک وقت 3 دھماکے ہوئے جس کے بعد ہرطرف لاشیں  اور زخمی نظر آرہے تھے۔

افغان میڈیا کے مطابق مقامی حکام نے ہلاکتوں ميں اضافے کا خدشہ ظاہر کيا ہے۔

ھماکا شہر کی سب سے بڑی امام بارگاہ میں ہوا جس کے بعد ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ امارت اسلامیہ قندھار میں شہریوں پر وحشیانہ حملے کی مذمت اور جاں بحق افراد کے لواحقین سے اظہار تعزیت کرتی ہے اور سیکیورٹی فورسز کو ہدایت دیتی ہے کہ وہ ایسے واقعات کے ذمہ داروں کو جلد سے جلد تلاش کرکے قانون کے کٹہرے میں لائے۔

دھماکے کی ذمہ داری تاحال کسی تنظیم نے قبول نہیں کی تاہم اس قسم کے دھماکوں میں اکثر دہشت گرد تنظیم داعش ملوث رہی ہے۔

خیال رہے کہ اس وقت افغانستان کے بیشتر حصوں میں داعش کیخلاف طالبان کا آپریشن بھی جاری ہے جبکہ حالیہ دنوں میں داعش کی مختلف کارروائیوں میں متعدد طالبان جنگجو بھی جاں بحق ہوچکے ہیں۔

گزشتہ جمعہ کو بھی افغانستان کے شہر قندوز کی مسجد اخوندزاد ميں نماز جمعہ کے دوران ہونے والے دھماکے میں بھی تقریباً 100 افراد شہید ہوچکے تھے جس کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش خراسان نے قبول کرلی تھی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube