Tuesday, October 19, 2021  | 12 Rabiulawal, 1443

اشرف غنی کی طالبان حکومت کی حمایت میں پوسٹ؟

SAMAA | - Posted: Sep 27, 2021 | Last Updated: 3 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 27, 2021 | Last Updated: 3 weeks ago

فوٹو: تولو نیوز

سابق افغان صدر اشرف غنی نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ایک پوسٹ شیئر کی ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ کچھ ممالک ہمارے سابق سفیروں کے ذریعے افغانستان میں ایک نئے بحران کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔

دبئی میں مقیم سابق افغان صدر اشرف غنی کا پوسٹ میں کہنا تھا کہ ہمارا اور اس وقت ہماری سابق کابینہ کا افغانستان پر کنٹرول نہیں ہے لیکن پھر بھی کچھ ممالک افغانستان میں ایک نیا بحران پیدا کرنےکے حوالے سے ہمارے سابق سفیروں اور دیگر نمائندوں کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔

اشرف غنی کے آفیشل فیس بک پیج سے جاری بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ غلام محمد اسحاق زئی آج اقوام متحدہ کے اجلاس سے ایسے حالات میں خطاب کر رہے ہیں کہ ان کے پیچھے حکومت اور عوامی حمایت نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی قانون کے تحت وہ موجودہ حکومت کی نمائندگی نہیں کر سکتے۔

اشرف غنی نے بین الاقوامی برادری سے اپیل بھی کی افغان قوم سے دور رہنے کے بجائے انہیں موجودہ حکومت سے بات چیت کرنی چاہیے اور افغان قوم کا منجمد بجٹ ریلیز کرکے طالبان حکومت کو تسلیم کرلینا چاہیے۔

پوسٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ بین الاقوامی برادری کو یہ سمجھنا چاہیے کہ اگر افغانستان خوشحالی اور امن کا خواہاں ہے تو اس کی طرف دوستی کا ہاتھ ضرور بڑھائیں کیوں کہ وہ اس ملک کو دشمنی کے ذریعے اپنے زیر اثر نہیں لاسکتے۔

دوسری جانب اشرف غنی کے ٹویٹر اکاونٹ سے ایک ٹویٹ کے ذریعے بتایا گیا ہے کہ ان کا آفیشل فیس بک اکاؤنٹ ہیک کرلیا گیا ہے اور بحال نہ ہونے تک اس اکاؤنٹ سے پوسٹ کیا گیا مواد درست تصور نہ کیا جائے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube