Tuesday, October 26, 2021  | 19 Rabiulawal, 1443

داعش خراسان کے سربراہ ابوعمر خراسانی کی ہلاکت کی تصديق

SAMAA | - Posted: Sep 25, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 25, 2021 | Last Updated: 1 month ago

افغان طالبان نے افغانستان ميں داعش کے سربراہ ابوعمر خراسانی کی ہلاکت کی تصديق کردی۔

افغان طالبان نے ابوعمر خراسانی کی ہلاکت کا آج اعلان کرديا تاہم انہیں طالبان کے کابل پر قبضے کے 2 دن بعد 17 اگست کو گولی مار کر ہلاک کردیا گیا تھا۔

داعش خراسان کے بانی رہنما ابوعمر خراسانی کا اصل نام مولوی ضیاءالحق تھا اور ان کا تعلق افغانستان کے صوبہ کنڑ سے تھا۔ سابقہ افغان حکومت میں ابوعمر خراسانی کے ایک بھائی سمیت متعدد رشتہ دار اہم عہدوں پر بھی فائز تھے۔

خراسانی اپریل 2017 میں داعش خراسان کے دوسرے امیر شیخ عبدالحسیب لوگری کے امریکی اسپیشل فورسز کے حملے میں مارے جانے کے بعد ان کے جانشین بنے تھے۔

واضح رہے کہ افغانستان پر قبضے کے بعد طالبان نے ملک بھر کی جیلوں میں قید ہزاروں افراد کو رہا کردیا تھا تاہم اپنی مخالف عالمی شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ یا داعش خراسان کے گرفتار سربراہ شیخ ابو عمر خراسانی کے بارے میں ذرائع ابلاغ میں ایسی خبریں آئی تھیں کہ انہیں طالبان کی جانب سے قتل کردیا گیا ہے جس کی طالبان کی جانب سے اب باقاعدہ تصدیق بھی کردی گئی ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube