Monday, October 25, 2021  | 18 Rabiulawal, 1443

طالبان امريکا کے اتحادی بن سکتے ہيں،وزیراعظم

SAMAA | - Posted: Sep 24, 2021 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Sep 24, 2021 | Last Updated: 1 month ago

امريکی جريدے نيوزويک کو انٹرويو

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ امريکا کو افغانستان کے معاملات ميں شامل رہنا چاہيے طالبان بھی امن کے ليے امريکا کے اتحادی بن سکتے ہيں۔

امريکی جريدے نيوزويک کو انٹرويو میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ خطے کو تباہی سے بچانے کا واحد راستہ امريکا اور ديگر بڑی طاقتوں کا تعاون ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 40 سال ميں پہلی بار پورے افغانستان ميں طالبان کی واحد حکومت قائم ہوئی ہے اس ليے اميد کی جاسکتی ہے کہ پورے ملک ميں امن اور استحکام آجائے گا۔

وزيراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پرامن افغانستان پاکستان کے ليے فائدہ مند ہوگا کیوں کہ پرامن افغانستان سے تجارت اور ترقی کے منصوبوں کے ليے امکانات روشن ہوجائيں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں کابل حکومت کے تعاون سے دہشت گرد نیٹ ورک خصوصاً ٹی ٹی پی سے نمٹنا ہوگا۔

ايشيا ميں امريکی ساکھ کے مستقبل پر سوال کے جواب ميں عمران خان نے کہا کہ عالمی سطح پرامريکا کی ساکھ متاثر ہونے کا امکان نہيں۔

انہوں نے کہا کہ چين نے افغانستان کومعاشی حمايت کی پيشکش کی ہے جسے افغان قبول کرليں گے کیوں کہ وہ پاک چین اقتصادی راہداری کا حصہ بننا چاہتے ہیں۔

طالبان حکومت کو تسليم کيے جانے کے سوال پرعمران خان نے کہا کہ جب پورے افغانستان ميں طالبان کی عملداری قائم ہوجائے گی اورپڑوسی ممالک انہيں تسليم کرليں گے تب ہم بھی ان کے فيصلے کے ساتھ ہوں گے۔

وزيراعظم کا کہنا تھا کہ بھارت کوجديد ترين ہتھياروں کی فراہمی باعث تشويش ہے اس سے جنوبی ايشيا ميں ہتھياروں کی دوڑ سے دونوں ملکوں کی معاشی و سماجی ترقی متاثرہوگی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube