Friday, October 22, 2021  | 15 Rabiulawal, 1443

افغانستان:ہاتھ کاٹنے اور سزائےموت کی بحالی کااعلان

SAMAA | - Posted: Sep 24, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 24, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago

قوانین شرعیت پرمبنی ہونگےکوئی ڈکٹیٹ نہ کرے،طالبان

طالبان رہنما ملا نورالدين ترابی کا کہنا ہے کہ افغانستان میں پھانسی اور ہاتھ کاٹنے کی سزائيں بحال کی جائيں گی مگر اس بار ان پر عملدرآمد سر عام نہیں ہوگا۔

ملا نورالدين ترابی کا کہنا ہے کہ مذکورہ سزائیں بحال ہونے کہ صورت میں اس کی ويڈيو اور تصاوير بنانے کی اجازت ہوگی تاکہ لوگوں کو عبرت حاصل ہو۔

نورالدين ترابی نے خواتين کو بھی جج بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اس مرتبہ علماء کے بجائے جج مقدمات کا فيصلہ کريں گے لیکن قوانین قرآن و سنت پر ہی مبنی ہی ہوں گے لہٰذا ہمیں یہ نہ بتایا جائے کہ افغانستان کے قوانين کيا ہونے چاہئيں۔

دوسری جانب افغان نائب وزيراطلاعات ذبيح اللہ مجاہد کا غيرملکی ميڈيا کو دیے گئے ایک انٹرويو ميں کہنا تھا کہ پابنديوں کے خاتمے کے ليے روس اقوام متحدہ اور افغانستان کے درميان ثالث بن سکتا ہے۔

ذبيح اللہ مجاہد کا کہنا تھا کہ اگر سہيل شاہين کو اقوام متحدہ ميں افغانستان کا نمائندہ تسليم کرليا گيا تو دیگر مسلم ممالک کی طرح يورپی يونين اور امريکا سے بھی مضبوط اور طويل مدتی تعاون کی کوششيں کی جاسکتی ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube