Tuesday, November 30, 2021  | 24 Rabiulakhir, 1443

بھارت کا افغانستان کی خاتون رکن پارلیمنٹ کو پناہ دینے سےانکار

SAMAA | - Posted: Aug 26, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 26, 2021 | Last Updated: 3 months ago

بھارتی حکومت نے افغان خواتین کی مدد سے انکار کرتے ہوئے ایک خاتون رکن پارلیمنٹ کو ایئرپورٹ سے ہی ملک بدر کردیا گیا۔
بھارتی میڈیا کے مطابق رنگینا کارگر20 اگست کی صبح دبئی کی پرواز سے براستہ استنبول نئی دہلی ایئرپورٹ پہنچیں لیکن انہیں ایئرپورٹ سے نکلنے کی اجازت نہیں مل سکی۔
خاتون رکن پارلیمنٹ کا کہنا ہے کہ انہیں نئی دہلی پہنچنے کے 2 گھنٹے بعد ایئر پورٹ سے ہی ڈی پورٹ کر دیا گیا اور پرواز کے ذریعے واپس استنبول بھیج دیا گیا۔
میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے افغان خاتون رکن پارلیمنٹ رنگینا کارگر نے بتایا کہ دہلی ایئرپورٹ پہنچتے ہی مجھے ایسے ملک بدر کیا گیا جیسے میں کوئی مجرم ہوں۔
رنگینا کارگر جو افغان پارلیمنٹ کے فاریاب سے رکن ہیں کا کہنا ہے کہ کابل میں صورتحال بدل گئی ہے اور مجھے امید تھی کہ بھارتی حکومت افغان خواتین کی مدد کرے گی لیکن شاید کابل کی سیاسی صورتحال تبدیل ہونے کی وجہ سے ایسا ہوا ہے۔
افغان رکن پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ مجھے گاندھی کے ہندوستان سے اس سلوک کی توقع نہیں تھی مجھے امید تھی کہ بھارتی حکومت افغان خواتین کی مدد کرے گی لیکن ایسا نہیں ہوا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube