Monday, December 6, 2021  | 30 Rabiulakhir, 1443

ملاعبدالغنی برادر کواہم ذمہ داری دینے کافیصلہ، قندھار پہنچ گئے

SAMAA | - Posted: Aug 17, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 17, 2021 | Last Updated: 4 months ago

امیر امارات اسلامیہ ہیبت اللہ سے ملاقات کرینگے

طالبان نے افغانستان کے نئے عبوری سیٹ اپ میں نائب امیر ملا عبدالغنی برادر کو اہم ذمہ داری دینے کا فیصلہ کرلیا، ملا برادر 20 سال بعد قندھار پہنچ ہوگئے، امیر امارات اسلامی ہیبت اللہ اخوندزادہ سے ملاقات کے بعد کابل جائیں گے۔

طالبان نے اتوار کو افغان دارالحکومت کابل سمیت تقریباً پورے ملک پر قبضہ کرلیا تھا، طالبان جنگجو بغیر لڑائی کے کابل میں داخل ہوئے، اس سے قبل ہی سابق افغان صدر اشرف غنی ملک سے فرار ہوگئے تھے۔

ذرائع کے مطابق طالبان نے عبوری حکومت کے سیٹ اپ میں سیاسی امور کے سربراہ ملا عبدالغنی برادر کو اہم ذمہ داری دینے کا فیصلہ کرلیا جس کے بعد وہ اپنے دیگر معاونین کے ساتھ قطر سے افغانستان روانہ ہوئے۔

ملا برادر 20 سال بعد افغانستان واپس پہنچے ہیں، جہاں وہ قندھار میں امیر امارات اسلامی ہیبت اللہ اخوندزداہ سے ملاقات کریں گے، جس میں اہم امور طے کئے جائیں گے۔

ملا عبدالغنی برادر قندھار سے کابل روانہ ہوں گے، جہاں انہیں اہم ذمہ داری تفویض کی جائے گی۔ واضح رہے کہ عبوری سیٹ اپ کیلئے سراج الدین حقانی، عباس استانکزئی اور ملا عبدالغنی برادر کے نام زیر غور تھے۔

عبوری سیٹ اپ کیلئے حامد کرزئی، عبداللہ عبداللہ، گلبدین حکمتیار بھی سرگرم ہیں، جن کی کوشش ہے شمالی اتحاد اور دیگر گروپوں کے نمائندے بھی عبوری سیٹ میں شامل کئے جائیں۔

طالبان نے دیگر گروہوں کے نمائندوں کو عبوری سیٹ اپ میں شامل کرنے پر آمادگی ظاہر کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایسے لوگوں کو شامل کیا جاسکتا ہے جن کا ماضی صاف ہو اور ان پر کوئی بڑا الزام نہ ہو۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق طالبان نے اس بار ماضی کی طرح خواتین پر پابندیاں نہ لگانے کے ساتھ ساتھ حکومتی اہلکاروں کیلئے بھی عام معافی کا اعلان کیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube