Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

خلاء میں پہنچنے کی دوڑ، رچرڈ برینسن نے میدان مارلیا

SAMAA | - Posted: Jul 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago

برطانوی بزنس مین خلاء کا سفرکرنیوالے پہلے شخص بن گئے

ارب پتی شخصیات کی خلاء میں پہنچنے کی دوڑ کے مرحلے میں برطانوی بزنس مین نے میدان مار لیا۔ رجرڈ برینسن اپنی کمپنی کے کمرشل اسپیس فلائٹ پر خلاء کا سفر کرنیوالے پہلے شخص بن گئے ہیں۔

خلاء ميں سفر کے خواب کو تعبير مل گئی، برطانوی بزنس مين رجرڈ برینسن پہلی بار ایک مختلف نوعیت کے خلائی جہاز میں بيٹھ کر خلاء کے سفر پر پہنچے۔

اسپیس شپ نے زمین سے اڑان نہیں بھری بلکہ ایک منفرد ڈیزائن والے جہاز نے اسپیس شپ کو 44 ہزار فٹ کی بلندی پر جاکر ریلیز کیا، جہاں سے خلائی جہاز راکٹ پاور انجن کے ذریعے زمین کی سطح سے 89.9 کلومیٹر اوپر گیا۔

رپورٹ کے مطابق اس اونچائی پر پہنچ کر راکٹ طیارے نے انجن کچھ لمحوں کیلئے بند کردیا، جہاں اسپیس شپ میں سوار افراد انتہائی کم کشش ثقل ہونے کے باعث ہوا میں تیرتے ہوئے نظر آئے۔

اسپیس شپ کو 2 پائلٹس چلا رہے تھے جبکہ 3 ٹیکنیکل ماہرین بھی ان کے ہمراہ تھے، راکٹ نے چند لمحے وہاں گزارے پھر واپسی کا عمل شروع ہوا۔ اسپیس طیارہ خیریت کے ساتھ زمين پر واپس لینڈ بھی کرگیا۔ ٹیک آف سے ليکر لینڈنگ تک کل ملا کر ایک گھنٹے کا وقت لگا۔

زمين پر لوٹنے کے بعد رچرڈ برينسن نے ٹويٹ کيا، لکھا کہ جب ہم چھوٹے تھے تو زمين پر رہ کر آسمان پر ٹنگے ستاروں کو ديکھا کرتے تھے، بڑے ہونے اور آسمان پر پہنچنے کے بعد اپنی خوبصورت دنيا کو ديکھ کر بے حد خوشی ہوئی۔

ستر سال کے رچرڈ نے دنيا کے نوجوانوں کو پيغام ديا کہ جب ہم کرسکتے ہيں تو تصور کرو تم کيا کرسکتے ہو۔

برطانوی بزنس مين رچرڈ برینسن نے 2004ء ميں خلائی کمپنی ورجن گیلاٹک کی بنیاد رکھی تھی جس نے آخر کار 17 برس بعد پہلی کامیاب کمرشل اسپیس فلائٹ مکمل کی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube