Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

ویکسین بنانےوالی کمپنیوں نےتیسری خوراک کی تجویز دیدی

SAMAA | - Posted: Jul 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 12, 2021 | Last Updated: 3 months ago

فوٹو: گلوبل نیوز

کرونا وائرس کی بدلتی ہوئی اقسام کے پيش نظر ويکيسن بنانے والی کمپنياں تيسری خوراک لگوانے کی تجويز دیدی۔

ویکسین بنانے والی کمپنیوں کا کہنا ہے کہ بھارتی کرونا ویرینٹ ڈیلٹا انتہائی تیزی سے پھيل رہا اس لیے ويکسين کی دو خوراکيں ناکافی ہونگی۔

چينی ويکسين کمپنی سائنوفارم اور سائنو ويک کے علاوہ فائزر بھی کرونا کی بدلتی ہوئی اقسام کے خلاف مدافعت کےليے تيسری خوراک کی سفارش کرچکی ہيں۔

امريکی کمپنی فائزر نے تيسری ڈوز کےليے ايف ڈی اے سے منظوری طلب کرلی ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ ويکسين کی تيسری خوراک سے جسم ميں اينٹی باڈی کی سطح 5 سے 10 گنا بڑھ جاتی ہے جو کرونا کی بيٹا اور ديگر اقسام سے بچاؤ کے ليے مددگار ہوگی۔

دوسری جانب متحدہ عرب امارات ميں سائنو فارم کی تيسری خوراک کی منظوری دی جاچکی ہے۔ خليج ٹائمز کے مطابق ويکسين کا تيسرا انجکشن دوسری خوراک کے 6 ماہ بعد لگايا جائے گا۔

اسی طرح ترکی میں بھی ڈيلٹا وائرس سے بچاؤ کےليے تيسری خوراک لگائی جائے گی۔

واضح رہے کہ کرونا ویرینٹ ڈیلٹا اس سے قبل بھارت میں تباہی مچاچکا ہے، بھارت میں اس ویرینٹ کے باعث 4لاکھ 8ہزار سے زائد اموات رپورٹ ہوچکی ہیں۔

یاد رہے کہ امریکا کرونا کی تباہی سے سب سےزیادہ متاثرہ ملک ہے جہاں کرونا وائرس کے باعث 6 لاکھ 22ہزار سے زائد اموات ہوئیں، دوسرے نمبر برازیل ہے جہاں 5لاکھ 33 ہزار جبکہ بھارت دنیا کا تیسرا ملک ہے جہاں کرونا نے تباہی مچاتے ہوئے 4لاکھ 8ہزار 792 افراد کو لقمہ اجل بنایا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube