Tuesday, October 19, 2021  | 12 Rabiulawal, 1443

نتین یاہوکے 12سالہ اقتدار کاخاتمہ، نفتالی بینیٹ اسرائیلی وزیراعظم منتخب

SAMAA | - Posted: Jun 14, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 14, 2021 | Last Updated: 4 months ago

فوٹو: ٹائمز آف اسرائیل

اسرائیلی کے سابق وزیراعظم نیتن یاہو کا 12سالہ اقتدار ختم ہونے کے بعد نفتالی بینیٹ اسرائیل کے نئے وزیراعظم منتخب ہوگئے۔

اسرائیلی میڈیا رپورٹس کے مطابق اسرائیلی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے گزشتہ ہفتے ملک میں نئی حکومت کے انتخاب کے لیے 13 جون کو ووٹنگ کرانے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد پارلیمنٹ میں نئی حکومت کی تشکیل کےلیے ووٹنگ ہوئی جس میں نفتالی بینٹ کی ’نیو رائٹ‘ پارٹی نے اتحادی جماعتوں کےہمراہ 60ووٹ حاصل کرکے کامیابی حاصل کرلی۔

نیو رائٹ پارٹی کے سربراہ نفتالی بینیٹ اسرائیل کےنئے وزیراعظم کے عہدے کا حلف اٹھائیں گے تاہم اقتدار میں رہنے کےلیے انہیں مرکز اور دائیں اور بائیں بازو کی اتحادی جماعتوں کے ساتھ اتحاد کو برقرار رکھنا پڑے گا  کیونکہ سابق اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو صرف ایک ووٹ کی کمی کے باعث حکومت بنانے میں ناکام ہوئے ہیں۔

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی پارلیمنٹ میں اکثریت ختم

سابق اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو اسمبلی میں اکثریت ثابت کرنے کی مہلت میں ناکام ہوگئے تھے اور اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد نے وزیراعظم نیتن یاہو سے غزہ میں بمباری کے بعد سے دوری اختیار کرنا شروع کردی تھی۔

Netanyahu out, Bennett in as Israel marks 'end of an era' | Free Malaysia  Today (FMT)

اس سے قبل نیتن یاہو نئی مخلوط حکومت کو صدی کا سب سے بڑا فراڈ قرار دے چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ الیکشن ریاستِ اسرائیل اور عوام دونوں کے لیے خطرہ ہیں۔

حماس اور اسرائیل کے درمیان معاہدے کے روشن امکانات، رپورٹ

دوسری جانب نفتالی بینٹ نے سابق اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی خدمات پرانکا شکریہ ادا کیا۔

Netanyahu out, Bennett in as Israel marks end of an era | World |  unionleader.com

واضح رہے کہ اسرائیل میں گزشتہ دو برسوں میں چار بار الیکشن ہوچکے ہیں اور ہر بار نیتن یاہو کی جماعت سب سے زیادہ ووٹ لینے میں تو کامیاب ہوجاتی ہے لیکن حکومت بنانے کےلیے درکار اکثریت ثابت نہیں کرپائی تھی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube