Saturday, October 16, 2021  | 9 Rabiulawal, 1443

ایرانی بحریہ کاسب سے بڑا جہازخلیج عمان میں ڈوب گیا

SAMAA | - Posted: Jun 2, 2021 | Last Updated: 5 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 2, 2021 | Last Updated: 5 months ago

ایرانی بحریہ کا سب سے بڑا جہاز خلیج عمان میں آتشزدگی کے بعد مکمل طور پر ڈوب گیا، جہاز تہران کے جنوب مشرق میں 1270 کلو میٹر کی دوری پر غرقاب ہوا۔

ایرانی اور بین الاقوامی میڈیا کے مطابق ایرانی بحریہ کے سب سے بڑا لاجسٹک جہاز “خارک” بدھ کو مکمل طور پر ڈوب گیا، جہاز میں آگ لگنے کی وجہ تاحال معلوم نہیں ہوسکی۔

غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق یہ جہاز عسکری معاونت کے مشن پر تھا اور جنگی ہیلی کاپٹر لے کر جارہا تھا، جس میں منگل اور بدھ کی درمیانی شب 2 بجکر 25 منٹ پر آگ لگی، جہاز پر موجود تمام کارکنان کو بحفاظت نکال لیا گیا تاہم آگ بجھانے کی تمام تر کوششیں ناکام ہوگئیں۔

ایرانی بحریہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تمام افراد جہاز سے بحفاظت اتر جانے میں کامیاب رہے، بیان میں آگ لگنے کی وجہ کا ذکر نہیں کیا گیا۔

ڈوبنے والا یہ جہاز ایران کیلئے تیل کے اہم ٹرمینل کا کام انجام دیتا تھا جو گزشتہ 40 برسوں سے فعال تھا۔ یہ بحری جہاز سمندر میں موجود دیگر جہازوں کی مدد اور بھاری مال برداری کی صلاحیت کا حامل تھا۔

رپورٹ کے مطابق ایران نے رواں سال اپریل میں اعلان کیا تھا کہ بحر احمر میں اس کے ایک بحری جہاز کو نشانہ بنایا گیا۔ ذرائع نے العربیہ کو بتایا تھا کہ اسرائیلی کمانڈوز نے ایرانی جہاز کو تباہ کرنے کیلئے اس پر دھماکا خیز مقناطیسی آلہ چپکا دیا تھا۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے بھی ایک امریکی ذمہ دار کے حوالے سے بتایا تھا کہ اسرائیل نے واشنگٹن کو ایرانی بحری جہاز نشانہ بنانے سے آگاہ کیا تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube