چین نے اپنے شہریوں کیلئے بچوں کی پیدائش کی حد بڑھادی

SAMAA | - Posted: May 31, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 31, 2021 | Last Updated: 2 months ago

چین نے آبادی کی شرح میں کمی کے باعث اپنے شہریوں کیلئے بچوں کی پیدائش کی حد بڑھادی، اب جوڑے 3 بچے پیدا کر سکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے اے ایف پی نے  چین کے سرکاری میڈیا کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا ہے کہ مردم شماری کے نتائج کے مطابق چین میں عمر رسیدہ افراد کی آبادی میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، جس کے بعد بچوں کی پیدائش میں اضافے کی اجازت دی گئی ہے۔

چین نے بڑھتی ہوئی آبادی پر قابو پانے کیلئے گزشتہ 40 سالوں سے ’فی خاندان ایک بچہ‘ کی پالیسی اپنائی ہوئی تھی تاہم عمر رسیدہ افراد میں اضافے اور اقتصادی سست روی کے خدشے کے باعث 2016ء میں اس پالیسی میں نرمی کرتے ہوئے ہر جوڑے کو 2 بچے پیدا کرنے کی اجازت دے دی گئی تھی۔

حکومت کی جانب سے فیملی پلاننگ پالیسی میں تبدیلی کے بعد بھی چین میں سالانہ شرح آبادی مسلسل کم ہورہی ہے۔ ماہرین کے مطابق 2050ء تک چین کو بڑی تعداد میں عمر رسیدہ افراد کی مالی مدد اور انہیں صحت کی سہولیات مہیا کرنے کا بوجھ برداشت کرنا پڑے گا۔

عمر رسیدہ افراد کی آبادی میں تیزی سے اضافے سے نمٹنے کیلئے پیر کو چینی صدر شی جن پنگ نے ہر جوڑے کو 3 بچے پیدا کرنے کی اجازت دے دی ہے۔

دس سال بعد 2020ء میں چین میں مردم شماری ہوئی تھی جس کے نتائج گزشتہ ماہ جاری کئے گئے تھے۔ جس سے معلوم ہوا تھا کہ 1960ء کی دہائی کے بعد سے چین کی آبادی میں اضافے کی شرح انتہائی سست روی کا شکار ہے۔

چین میں 2016ء میں فیملی پلاننگ کی پالیسی میں نرمی کے باوجود بچوں کی آبادی میں اضافہ نہیں ہوا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube