Sunday, September 26, 2021  | 18 Safar, 1443

محمد ضیف کون ہیں اوراسرائیل انہیں کیوں مارناچاہتا ہے؟

SAMAA | - Posted: May 24, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: May 24, 2021 | Last Updated: 4 months ago

فوٹو: مڈل ایسٹ مونیٹر

اسرائیل کے وزیر دفاع بینی گینٹز کا کہنا ہے کہ اسرائیل حماس کےعسکری ونگ القسام بریگیڈز کے کمانڈر محمد الضیف کو ہلاک کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دے گا۔

اسرائیلی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے دو بار محمد الضیف کو ہلاک کرنے کی ناکام کوششوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ “یہ ہماری طرف سے کوئی آخری کوشش نہیں، آخر کار ہم کامیاب ہو جائیں گے”۔

سیزفائرکے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے اسرائیلی وزیر دفاع نے کہا کہ ’یہ حماس کے رویے پر منحصر ہے کہ کتنے عرصہ جنگ بندی رہتی ہے‘۔

اسرائیلی حملےکاشکارکمسن بچہ ماں کا دودھ کیوں نہیں پیتاتھا؟

گزشتہ دنوں غزہ کی پٹی میں اسرائیلی حملوں میں 68 بچوں اور خواتین سمیت 248فلسطینی شہید ہوئے تھے جبکہ حماس کی جانب سے راکٹ حملوں میں اسرائیل میں 13 افراد کی ہلاک ہوئے تھے۔

محمد ضیف کون ہیں؟

اسرائیلی فوج نے غزہ پرحالیہ حملے کے دوران حماس کے فوجی کمانڈر محمد ضیف کو قتل کرنے کی دو بار کوشش کی مگر دونوں بار ناکام رہی۔

حماس کے فوجی کمانڈر محمد ضیف پچھلے 25 برس سے اسرائیل کی ہٹ لسٹ پر موجود ہیں، اور اطلاعات کے مطابق اس سے قبل کم از کم پانچ بار ان کی جان لینے کی کوشش کی جا چکی ہے اور وہ بار بار زخمی ہوتے رہے ہیں مگر ہر بار بچ نکلتے ہیں۔

محمد ضیف عزالدین القسام بریگیڈ کے کمانڈر ہیں جو حماس کا ملٹری ونگ ہے۔ قسام بریگیڈ کو امریکہ اور یورپی یونین نے دہشت گرد تنظیم قرار دے رکھا ہے۔ اسرائیل کا الزام ہے کہ اسرائیلی شہریوں پر ہونے والے کئی حملوں کے پیچھے ان کا ہاتھ ہے اس لیے انہیں عام طور پر اسرائیل کا ’دشمن نمبر ایک‘ سمجھا جاتا ہے۔

Hamas Executes Member Who Informed on Mohammad Deif | Jewish & Israel News  Algemeiner.com

محمد ضیف کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ دیسی ساختہ بم بنانے کے ماہر اور عمدہ عسکری صلاحیتوں کے مالک ہیں۔ بی بی سی کے ایک رپورٹ کے مطابق محمد ضیف نے بم سازی کا فن حماس کے رہنما یحییٰ عیاش سے سیکھا تھا جو بم بنانے کے ماہر تھے اور ’انجینیئر‘ کے نام سے مشہور تھے اور مبینہ طور پر فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیل پر کیے جانے والے خودکش حملوں کے ماسٹر مائنڈ تھے۔

اسرائیلی وزیراعظم نےفلسطینیوں کیخلاف بربریت کااصل مقصد بتادیا

ان کا اصل نام محمد ذیاب ابراہیم المصری ہے، مگر چونکہ ان کا کوئی مستقل ٹھکانہ نہیں، اس لیے وہ ضیف کے نام سے مشہور ہوگئے جس کا عربی میں مطلب ’مہمان‘ ہے۔ وہ 1965 میں خان یونس میں پیدا ہوئے تھے۔

محمد ضیف نے کالج میں سائنس کی تعلیم حاصل کی اور 1987 میں حماس میں شامل ہو گئے۔ 2002 میں وہ اسرائیل کے ہاتھوں صلاح شحادة کے قتل کے بعد القسام بریگیڈ کے سربراہ بن گئے۔

فرانس 24 کے مطابق ان کے صرف تین ٹیلی ویژن انٹرویو موجود ہیں جن میں ان کا چہرہ اندھیرے میں ہے۔ محمد ضیف کی کوئی حالیہ تصویر بھی نہیں ملتی اور ان کی آخری مصدقہ تصویر 1989 کی ہے جب ان کی عمر 24 برس تھی۔

اسرائیل کی حمایت، ایپ اسٹورز پر فیس بک کی ریٹنگ گرگئی

اسرائیلی حملے میں ان کے اہلِخانہ کا انتقال ہوا تو وہ جنازے میں بھی شریک نہیں ہوئے تاہم بعض میڈیا اطلاعات کے مطابق وہ شریک ہوئے تھے مگر کسی نے انہیں پہچانا نہیں۔

فرانس 24 کے مطابق محمد ضیف کے سسر نے بھی اعتراف کیا کہ ان کی اپنے داماد سے صرف ایک بار 2007میں ملاقات ہوئی تھی جب وہ رشتہ مانگنے ان کے پاس آئے تھے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube