Saturday, September 25, 2021  | 17 Safar, 1443

جنگ بندی کے باوجود اسرائیلی فوج کا مسجد اقصیٰ پر حملہ

SAMAA | - Posted: May 21, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: May 21, 2021 | Last Updated: 4 months ago

نہتے فلسطینیوں پر شیلنگ،ربڑکی گولیوں کی برسات

اسرائیل نے حماس سے جنگ بندی کے معاہدے کے باوجود نہتے فلسطینی مسلمانوں پر حملہ کردیا۔

گیارہ روز جاری رہنے والے حملوں اور خون ریزی کے بعد جنگ بندی کے اعلان کیا گیا تھا جس پر فلسطینی غزہ اور دیگر مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں جشن منا رہے تھے کہ اسرائیلی فوجیوں نے مسجد اقصیٰ سے ملحقہ صحن میں نمازیوں پر شیلنگ کرنے کے علاوہ ربڑ کی گولیاں بھی فائر کیں جس سے متعدد فلسطینی زخمی ہوگئے۔

قبل ازیں اسرائيل کی سيکيورٹی کابينہ اورحماس انتظاميہ ميں جنگ بندی پراتفاق ہوا تھا۔ اس حوالے سے ثالثی مصرنے کی تھی اور سیز فائر کے حوالے سے اسلامک جہاد اور حماس نے باقاعدہ تصديق بھی کردی تھی۔ جبکہ اسرائيلی وزيراعظم کے دفترسے بھی بیان جاری کردیا گیا تھا۔

اسرائیلی وزیراعظم نےفلسطینیوں کیخلاف بربریت کااصل مقصد بتادیا

 حماس نے اسرائيل کو خبردارکيا ہے کہ اسے مقبوضہ بيت المقدس ميں پرتشدد کارروائياں ختم کرنی ہونگی ورنہ حماس نے ہاتھ کھڑے نہيں کيے اور مزاحمت کے ليے اپنی قوت بڑھاتے رہيں گے۔

دریں اثناء اقوام متحدہ کے سيکريٹری جنرل انتونيو گوئتريس نے مطالبہ کيا ہے کہ جنگ بندی کے بعد حقيقی مصالحت يقينی بنائی جائے۔

اسرائیلی حملےکاشکارکمسن بچہ ماں کا دودھ کیوں نہیں پیتاتھا؟

 عرب میڈیا کے مطابق اسرائیلی اہلکاروں نے صحافیوں پر بھی تشدد کیا۔ اسرائیلی فوج کی جانب سے مسجد اقصیٰ پر چڑھائی کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہوئیں۔
WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube