Tuesday, June 22, 2021  | 11 ZUL-QAADAH, 1442

اسرائیل: مذہبی اجتماع کے دوران بھگڈر، 44 افراد ہلاک

SAMAA | - Posted: Apr 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 30, 2021 | Last Updated: 2 months ago

اسرائیل کے شمالی علاقے کوہ میرون میں مذہبی تہوار کے دوران بھگدڑ مچنے سے 44 افراد ہلاک اور 150 سے زائد زخمی ہوگئے، ہلاکتوں میں اضافے کا بھی خدشہ ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اسرائیلی حکام کا کہنا ہے کہ کوہ میرون کے علاقے میں ایک مذہبی بون فائر فیسٹیول کے دوران بھگڈر مچنے سے درجنوں افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ اسرائیلی وزیراعظم نے واقعے کو ’بھاری نقصان‘ قرار دیا ہے۔

بھگدڑ مچنے کا واقعہ دوسری صدی کے ربی شمعون بار یوچائی کے مقبرے پر سالانہ تقریب کے دوران پیش آیا، جس میں سینکڑوں الٹرا آرتھو ڈوکس یہودی شرکت کیلئے پہنچے تھے۔

اسرائیلی اخبار ہارٹز کے مطابق واقعے میں کم از کم 44 افراد ہلاک اور 150 سے زائد زخمی ہوئے۔

حکام صحت کے انتباہ کے باوجود جوش سے بھرے ہجوم نے کوہ میرون کی ڈھلوان کو بھر دیا۔ عینی شاہدین کے مطابق لوگ گزرنے والے راستے میں کچلے گئے۔۔

خیال رہے کہ کوہ میرون پر ہونیوالی لاگ با اومر نامی اس تقریب کو اسرائیل میں لوگوں کا سب سے بڑا اجتماع کہا جاتا ہے۔ گزشتہ سال کرونا وائرس کی وجہ سے یہ تقریب منعقد نہیں ہوسکی تھی۔

اسرائیلی اخبار ہارٹز کے مطابق پولیس کی طرف سے کھڑی کی گئیں رکاوٹیں بھی لوگوں کے وہاں سے نکلنے میں مشکلات کا باعث بنیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube