Sunday, October 17, 2021  | 10 Rabiulawal, 1443

سعودی عرب کاایران کیساتھ اچھے تعلقات کی خواہش کااظہار

SAMAA | - Posted: Apr 29, 2021 | Last Updated: 6 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 29, 2021 | Last Updated: 6 months ago

سعودی عرب نے ایران کے ساتھ اچھے تعلقات کی خواہش کا اظہار کردیا۔ محمد بن سلمان کا کہنا ہے کہ ایران کو پڑوسی ملک کی حیثیت سے دیکھتے ہیں، بنیادی مسئلہ تہران کا منفی طرز عمل ہے۔

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے ‘العربیہ’ کے ذریعے نشر ہونے والے ٹیلی ویژن انٹرویو میں کہا ہے کہ ان کا ملک ایران کو پڑوسی ملک کی حیثیت سے دیکھتا ہے جو اس بات کا اشارہ ہے کہ ریاض تہران کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کرنے کا خواہش مند ہے، ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ تہران کا منفی طرز عمل ہے۔

ایران سے متعلق سوال پر محمد بن سلامن نے کہا کہ ایران ایک ہمسایہ ملک ہے اور ہمیں امید ہے کہ اس کے ساتھ اچھے تعلقات قائم ہوں گے، ہم نہیں چاہتے کہ ایران کے ساتھ تعلقات خراب کریں، اس کے برعکس ہم چاہتے ہیں کہ ایران ترقی کرے، ہمارے مفادات ایران سے اور ایران کے سعودی عرب سے وابستہ ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ دو طرفہ تعلقات کو فروغ دے کر ہم خطے اور دنیا کو ترقی اور خوشحالی کی طرف راغب کرسکتے ہیں۔

سعودی ولی عہد نے مزید کہا کہ ہمارا مسئلہ ایران کے منفی رویے کا نتیجہ ہے، خواہ اس کا جوہری پروگرام ہو یا خطے کے کچھ ممالک میں قانون سے باہر ملیشیاؤں کی حمایت یا اس کے بیلسٹک میزائل پروگرام، یہ سب ہمارے لیے تعلقات کو آگے بڑھانے کی رکاوٹیں ہیں۔

انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ سعودی عرب ایران کے ساتھ اپنے مسائل کا حل تلاش کرنے کیلئے خطے اور دنیا میں اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر کام کررہا ہے۔

شہزادہ محمد بن سلمان نے اس بات پر بھی زور دیا کہ سعودی عرب اپنی سرحدوں پر مسلح ملیشیاؤں کی موجودگی کو قبول نہیں کرسکتا کیونکہ یہ مسلح گروپ اس کی سلامتی کیلئے خطرہ ہیں۔

انہوں‌ نے یمن کے حوثی باغیوں کو مذاکرات کی میز پر بیٹھنے کی دعوت کا بھی اعادہ کیا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube