نیٹو فورسز کا بھی افغانستان سے انخلاء کا اعلان

SAMAA | - Posted: Apr 15, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Apr 15, 2021 | Last Updated: 4 weeks ago

امریکا کی جانب سے ستمبر تک اپنے تمام فوجی واپس بلانے کے اعلان کے بعد نیٹو نے بھی افغانستان سے یکم مئی سے اپنے فوجی دستوں کا انخلاء شروع کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے گزشتہ روز افغانستان سے اپنے فوجیوں کے یکم مئی سے انخلاء کے آغاز کا اعلان کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ 11 ستمبر کو ورلڈ ٹریڈ سینٹر حملوں کی 20ویں سالگرہ سے قبل اپنے تمام فوجیوں کو افغانستان سے نکال لیں گے۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق افغانستان میں دفاعی اتحاد نیٹو نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ انخلاء منظم، مربوط اور سوچ سمجھ کر کیا جائے گا۔

نیٹو نے وزرائے خارجہ و دفاع سے بات چیت کے بعد اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہمارا ارادہ ہے کہ تمام امریکی اور نیٹو کی سربراہی میں فرائض انجام دینے والے فوجی مشن ریزولیوٹ سپورٹ مشن کا چند مہینوں میں انخلاء مکمل کرلیا جائے۔

نیٹو کے سیکریٹری جنرل جینز اسٹولٹن برگ کا کہنا ہے کہ اتحاد افغانستان میں ایک ساتھ گیا تھا، ہم نے ایک ساتھ وہاں خود کو صورتحال کے مطابق ڈھالا، اور ہم اسے ایک ساتھ ہی چھوڑیں گے، یہ آسان فیصلہ نہیں ہے اور اس میں خطرہ بھی ہے۔

دوسری جانب طالبان نے کہا ہے کہ وہ اس وقت تک کسی مذاکراتی عمل کا حصہ نہیں بنیں گے۔ جب تک افغانستان سے امریکی فوجیوں کا مکمل انخلاء نہیں ہو جاتا۔

طالبان نے امریکی فوجیوں کے انخلاء کی تاریخ میں توسیع پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ فوجیوں کے انخلاء میں تاخیر دوحہ معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

طالبان کے قطر میں ترجمان ڈاکٹر محمد نعیم نے عرب نیوز کو بتایا ہے کہ یہ ہمارا مؤقف ہے، جب تک تمام غیرملکی افواج ہماری سرزمین سے واپس نہیں چلی جاتیں ہم کسی بھی ایسی کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے، جس میں افغانستان کے حوالے سے فیصلہ کرنا مقصود ہو۔

امریکی صدر جو بائیڈن نے بدھ کو اعلان کیا تھا کہ وہ طویل ترین امریکی جنگ کے خاتمے کا منصوبہ رکھتے ہیں اور اب امریکی فوجیوں کے افغانستان سے گھر واپسی کا وقت آگیا ہے۔

وائٹ ہاؤس میں خطاب کرتے ہوئے جو بائیڈن نے افغانستان سے تمام دو ہزار 500 فوجیوں کے انخلاء کا ہدف مقرر کیا اور کہا کہ کوئی فوجی 11 ستمبر کے بعد وہاں نہیں رہے گا، حتمی انخلاء کا آغاز یکم مئی سے کیا جائے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube