سعودی عرب میں رمضان المبارک کا چاند نظرنہیں آیا

SAMAA | - Posted: Apr 11, 2021 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 11, 2021 | Last Updated: 2 months ago

سعودی عرب اور خلیجی ممالک میں پہلی رمضان المبارک 13 اپریل بروز منگل کو ہوگی۔

عرب میڈیا رپورٹس کےمطابق اتوار 11 اپریل کو سعودی عرب میں رمضان المبارک کا چاند نظر نہیں آیا ہے۔ سعودی عرب کےسپریم کورٹ نے شہریوں سے درخواست کی تھی کہ وہ رمضان المبارک کا چاند دیکھ کر شہادت دیں۔

سعودی حکام نے سخت ترین ایس او پیز کے تحت رواں سال رمضان المبارک میں عمرے کی ادائیگی کی اجازت دے دی ہے۔ تاہم مسجد الحرام اور مسجد نبویؐ میں اجتماعی افطاری اور اعتکاف پر پابندی برقرار رہے گی۔مسجد الحرام کے مشرقی حصے سمیت 5 جگہوں کو نماز کیلئے مختص کیا گیا ہے۔

عمرہ کے دوران یاد رکھنے والے ایس او پیز

 عمرہ متعمرین کو خانہ کعبہ چھونے کی اجازت نہیں ہوگی۔

 حرمین شریفین کی مساجد میں داخلے کے وقت ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا ہے۔

 ہینڈ سینٹائزر ہر جگہ دستیاب ہوں گے۔

 افطار دسترخوان لگانے پر پابندی ہوگی، البتہ افطار پیکٹ پیش کیے جاسکیں گے۔

 حرمین شریفین میں صرف کھجور کے ساتھ داخلے کی اجازت ہوگی، باقی ہر قسم کی خوراک تقسیم کرنے پر پابندی ہوگی۔

 مکہ میں عبادت گزاروں کو صرف شاہ عبداللہ کی توسیع والے حصے، پہلی منزل اور صحن میں عبادت کرنے کی اجازت ہوگی۔

 مطاف عام عبادت گزاروں کے لیے بند رہے گا۔

 حرمین شریفین کی دونوں مساجد میں اعتکاف پر پابندی ہوگی۔

 آب زم زم صرف انفرادی طور پر بوتلوں میں مہیا کیا جائے گا۔

صرف 10 رکعت تراویح اور 3 رکعت وتر پڑھائی جائیں گی۔

واضح رہے کہ مسجد الحرام میں نہ صرف یہ کہ طواف کے لیے لائنیں ترتیب دی گئی ہیں۔ مطعاف سے صفا و مروہ جانے اور اس سے قبل طواف کی 2 رکعت کی ادائیگی اور پھر مروہ سے سعی مکمل کرکے حرم شریف سے نکلنے تک لائنیں لگائی جارہی ہیں۔

سعودی حکام کے مطابق مطعاف ميں نماز کی اجازت نہیں ہوگی۔ صرف طواف کيا جاسکے گا۔ طواف کے بعد 2 رکعت نوافل پہلی منزل پر ادا کیے جاسکيں گے۔ نماز اور نفلی عبادات بيرونی صحن، پہلی منزل اور چھت پر ادا کی جاسکیں گی۔ خانہ کعبہ اور حجر اسود کو چھونے کی اجازت نہيں ہوگی۔

رمضان المبارک ميں کرونا وبا سے بچاؤ کےليے سعودی حکام نے 15سال سے کم عمر بچوں کا مسجد نبوی اور اس کے احاطے ميں داخلہ روک ديا ہے۔

سعودی حکام نےمسجد نبوی ميں تراويح کے دورانيہ بھی نصف کرنے کا فيصلہ کيا ہے جبکہ کرونا وائرس کی مہلک وبا کے باعث رواں سال مسجد نبوی ميں اعتکاف نہيں ہوگا۔

سعودی حکام کا کہنا تھا کہ رمضان کے دوران ہر فرد کو انتظامیہ کی جانب سے افطار کیلیے صرف کھجور اور پانی فراہم کیاجائے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube