’فائرزویکسین 12تا 15سال تک کے بچوں کیلئے محفوظ ومؤثر ہے‘

SAMAA | - Posted: Apr 1, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 1, 2021 | Last Updated: 4 months ago

امریکی دوا ساز ادارے فائزر نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی تیار کردہ کرونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین 12 سے 15 سال کی عمر تک کے بچّوں کیلئے بھی محفوظ اور مؤثر ہے۔

اس وقت دنیا بھر میں کووِڈ-19 کی زیادہ تر ویکسینیں صرف بالغوں کیلئے ہیں اور ان ہی پر استعمال کی جارہی ہیں۔ بالغ افراد ہی اس مہلک وائرس کا سب سے زیادہ شکار ہورہے ہیں، البتہ اب کم سن بچے بھی کرونا وائرس میں مبتلا ہورہے ہیں۔

فائزر کی ویکسین 16سال یا اس سے زیادہ عمر کے بالغ افراد پر استعمال کرنے کی اجازت ہے۔

فائزر کی ایک رپورٹ کے مطابق امریکا میں ایک مطالعے کے دوران 12 سے 15 سال کی عمر کے 2260 رضا کار بچّوں کو کرونا وائرس ویکسین لگائی گئی اور ان میں سے کسی میں بھی مرض سامنے نہیں آیا ہے۔

میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ فائزر کے بیان کے مطابق یہ چھوٹے پیمانے پر اسٹڈی تھی اور اس کو ابھی شائع نہیں کیا گیا ہے، تاہم یہ اس امر کا ثبوت ضرور ہے کہ ویکسین بچّوں کے مدافعتی نظاموں پر کیا اثرات مرتب کرے گی۔

محققین کا کہنا ہے کہ بچّوں میں کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے اعلیٰ سطح کی اینٹی باڈیز پیدا ہوئی ہیں اور یہ مدافعتی صلاحیت بعض حوالوں سے نوجوان بالغوں سے بھی زیادہ ہے۔

فرم کا کہنا ہے کہ بچوں میں بالغ افراد جیسے ہی ضمنی اثرات مرتب ہوئے ہیں، ان میں دوسری خوراک کے بعد بالخصوص درد، بخار، سردی لگنے جیسی علامات ظاہر ہوئی۔ مطالعے میں جن بچّوں کو ویکسین لگائی گئی ان کی دوسال تک نگرانی کی جائے گی تاکہ انہیں طویل المیعاد تحفظ مہیّا کرنے کیلئے مزید معلومات دستیاب ہوسکیں۔

فائزر کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) البرٹ بورلا نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ عمر کے اس گروپ کے بچوں کو امریکا میں نئے تعلیمی سال سے قبل ویکسین لگانے کا آغاز کردیا جائے گا۔

فائزر اور جرمن شراکت دار کمپنی بایو این ٹیک کا کہنا ہے کہ وہ آئندہ ہفتوں میں امریکا کی فوڈ اور ڈرگ انتظامیہ اور یورپی ریگولیٹر سے ویکسین کے 12 سال کی عمر تک بچّوں پر استعمال کی اجازت کیلئے رجوع کریں گی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube