Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

بین الاقوامی شہرت یافتہ مصنفہ نوال السعداوی انتقال کرگئیں

SAMAA | - Posted: Mar 22, 2021 | Last Updated: 6 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 22, 2021 | Last Updated: 6 months ago

فائل فوٹو

مصر سے تعلق رکھنے والی بین الاقوامی شہرت یافتہ مصنفہ اور ناول نگار نوال السعداوی طویل علالت کے بعد انتقال کر گئیں۔

وہ تحریک نسواں کی اہم ترین کارکن نوال کا انتقال نواسی برس کی عمر میں ہوا۔ وہ قاہرہ کے اسپتال میں زیر علاج تھیں اور طویل عرصے سے بیمار تھیں۔ وہ اکتوبر 1931 میں دریائے نیل کے کنارے قائرہ کے ایک گاؤں میں پیدا ہوئیں۔ انہوں نے طب کی ابتدائی تعلیم قاہرہ یونی ورسٹی اور بعد ازاں نیویارک یونی ورسٹی سے حاصل کی۔ وہ ایک فیزیشن اور سائیکریٹرسٹ بھی تھیں۔

مصری میڈیا سے جاری رپورٹس کے مطابق نوال السعداوی نے عرب دنیا اور خاص طور پر مصر میں خواتین کے حقوق کیلئے عمر گراں قدر خدمات انجام دیں۔ خواتین کے حقوق کی جدوجہد کرنے پر انہیں جیل میں ڈالا گیا، قدامت پسندوں کی جانب سے انہیں دھمکیا ں بھی دی گئیں۔

نوال السعداوی عرب خواتین یکجہتی ایسوسی ایشن کی بانی اور صدر تھیں۔ وہ عرب ایسوسی ایشن برائے انسانی حقوق کی شریک بانی تھیں۔ انہوں نے ایسے کئی عنوانات اور موضوعات پر کتابیں لکھیں جو عرب معاشرے میں ممنوعہ تھیں، جس کے باعث ان کی اشاعت متنازعہ رہیں۔

ان کی مشہور کتان آخری مرد کی موت کا اردر زبان میں بھی ترجمعہ کیا گیا تھا۔ تیرہ کہانیوں اور مختصر ناول میں انہوں نے عرب معاشرہ میں عورت کی کیا حیثیت سے متعلق سوالات بھی کیے تھے کہ مرد اسے کس طرح استعمال کرتا ہے؟ عورت کو زندہ رہنے کیلئے کیا قیمت ادا کرنی پڑتی ہے؟ نوال السعداوی کا ناول آخری مرد کی موت میں عورت پر ایک نئے سچ کا انکشاف ہوتا ہے۔

ان کے انتقال پر ترکی کی معروف ناول نگار الیف شافق نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube