بھارت نےجمہوریت کی پاسداری نہ کی توپابندیاں لگائینگے،امریکی سینیٹر

SAMAA | - Posted: Mar 19, 2021 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 19, 2021 | Last Updated: 4 months ago

فائل فوٹو

امریکی سینیٹر رابرٹ مینیڈز نے بھارت کو خبر دار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر جموری اقدار کی پاسداری نہیں کی گئی تو پابندیاں لگ سکتی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق امریکی سینیٹرز نے بھارت کو پابندیوں کا سامنا کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔ امریکی سینیٹ کی غیر ملکی تعلقات کمیٹی کے چیئرمین سینیٹر رابرٹ مینیڈز نے امریکی وزیر دفاع کو خط لکھا کر بھارت میں ہونے والی جمہوری اقدار کے خلاف کارروائیوں پر اپنی تشویش سے آگاہ کیا۔

رابرٹ مینیڈز نے خط میں بھارت میں مسلم مخالف رویوں، کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے اور سیاسی مخالفین کو جیل میں ڈالنے اور پابندیاں لگانے کا ذکر کیا ہے۔ سینیٹ قیادت نے بھارت میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور جمہوری اقدار سے ہٹنے پر شدید اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی بھارت پر زور دے کہ وہ انسانی حقوق کی بنیادی خلا ورزیوں کو بند کرے۔

لکھے گئے خط میں امریکی سینیٹر نے امریکی وزیر دفاع سے مطالبہ کیا گیا کہ بھارتی ہم منصب سے ملاقات میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی پر تشویش سے آگاہ کیا جائے اور صورت حال بہتر نہ ہونے پر بھارت پر پابندیاں عائد کی جائیں۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر دفاع الوئیڈ آسٹن اپنے پہلے دورہ بھارت کیلئے آج نئی دہلی روانہ ہونگے۔ ان کا یہ دورہ صدر جو بائیڈن انتظامیہ کے کسی بھی رکن کی جانب سے بھارت کا پہلا دورہ ہوگا۔

دورے کے دوران وہ بھارتی ہم منصب راج ناتھ سنگھ وزیر داخلہ جے شنکر، قومی سلامتی کے سربراہ اجیت ک ڈوول سے بھی ملاقات کریں گے۔ امریکی وزارت خارجہ کے مطابق دورے کا مقصد بھارت اور امریکا کے باہمی تعلقات کو مزید زیادہ وسیع کرنا ہے۔

قبل ازیں جنوری میں راج ناتھ سنگھ اور ان کے ہم منصب آسٹن نے واشنگٹن کی نئی دہلی کے ساتھ اہم دفاعی شراکت داری کے عزم پر زور دیا۔ دونوں رہنماؤں نے ایک آزاد اور آزاد ہند بحر الکاہل خطے کے بارے میں دونوں ممالک کے ویژن پر بھی بات چیت کی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube