Tuesday, June 22, 2021  | 11 ZUL-QAADAH, 1442

سری لنکا: مسلمان خواتین کے نقاب پرپابندی، مدارس بندکرنیکا فیصلہ

SAMAA | - Posted: Mar 13, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 13, 2021 | Last Updated: 3 months ago

سری لنکا میں مسلمان خواتین کے نقاب پہننے پر پابندی لگادی گئی، حکومت نے کئی مدارس بھی بند کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سری لنکا میں مسلمان خواتین کے نقاب پہننے پر پابندی اور مدارس بند کرنے کیلئے تجاویز منظوری کیلئے کابینہ کو بھیج دی گئیں۔

سری لنکا کے پبلک سیکیورٹی کے وزیر سارتھ ویرا سیکیرا کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر خواتین کے چہرہ مکمل ڈھانپنے پر پابندی لگائی جارہی ہے، ملک میں مدارس بند کرنے کی بھی منصوبہ بندی کررہے ہیں، پابندی کے مسودے پر دستخط کرکے کابینہ کو بھیج دیا۔

سری لنکن وزیر نے  کولمبو میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں قومی تعلیمی پالیسی لارہے ہیں، جس کے تحت کوئی اپنا اسکول نہیں کھول سکے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ ہمارے ابتدائی دور میں مسلمان خواتین اور لڑکیاں برقع نہیں پہنتی تھیں، یہ مذہبی شدت پسندی کی علامت ہے جو حال ہی میں نظر آئی ہے، ہم یقینی طور پر اس پر پابندی لگانے جارہے ہیں۔

بدھ مذہب کے ماننے والوں کے اکثریتی ملک میں برقع پر ابتدائی طور پر پابندی 2019ء میں چرچ اور ہوٹلوں پر ہونیوالے شدت پسند حملوں کے بعد لگائی گئی، جن میں 250 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ کرونا وباء سے جاں بحق ہونیوالے مسلمان شہریوں کی میتیں جلانے پر سری لنکن حکومت کیخلاف شدید احتجاج کیا گیا تھا، مسلمان خواتین کے برقع پہننے پر پابندی اور مدارس کی بندش پر بھی شدید عوامی رد عمل سامنے آنے کا خدشہ ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube