Thursday, March 4, 2021  | 19 Rajab, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

جمہوریہ کانگو میں قافلے پر حملہ، اطالوی سفیر ہلاک

SAMAA | - Posted: Feb 22, 2021 | Last Updated: 1 week ago
SAMAA |
Posted: Feb 22, 2021 | Last Updated: 1 week ago

جمہوریہ کانگو کے مشرقی علاقے میں پیر کے روز اٹلی کے سفیر کو گھات لگاکر قتل کردیا گیا۔

اٹلی کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ جمہوریہ کانگو کیلئے سفیر لوکا اٹاناسیو کو گوما نامی شہر میں اس وقت گولی مار دی گئی جب وہ کانگو میں اقوام متحدہ کے ایک مشن کے قافلے میں سفر کررہے تھے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ قافلے کے ساتھ سفر کرنیوالا اٹلی کی ملٹری پولیس کا ایک اہلکار بھی حملے میں مارا گیا۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کے قافلے پر کانیاما ہورو کے قصبے کے قریب حملہ کیا گیا جو اغواء کرنے کی ایک کوشش کا حصہ تھا۔

الجزیرہ کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اٹلی کے وزیر خارجہ لوئیگو ڈی مائیو نے واقعے پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ وہ برسلز میں یورپی یونین کے وزرائے خارجہ کے ایک اجلاس میں شریک تھے، جسے چھوڑ کر وہ اپنے ملک روانہ ہو گئے۔

ابھی تک کسی گروپ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ ہلاک اطالوی سفیر اٹاناسیو کی عمر 43 سال تھی اور وہ 2017ء سے کانگو کے صدر مقام کنشاسا میں تعینات تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube