متحدہ عرب امارات کا اسرائیل میں سفارتخانے کے قیام کافیصلہ

SAMAA | - Posted: Jan 24, 2021 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 24, 2021 | Last Updated: 3 months ago
UAE Israel relations

فوٹو: اے ایف پی

متحدہ عرب امارات کی کابینہ نے اسرائیل کے شہر تل ابیب میں سفارتخانہ قائم کرنے کی منظوری دے دی۔

غیر ملکی میڈیا عرب نیوز کے مطابق متحدہ عرب امارات کی حکومت نے فیصلے سے متعلق اعلان اتوار 24 جنوری کو ٹویٹر پر کیا۔ کابینہ کا اجلاس شیخ محمد بن راشد آل مکتوم، نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران کی زیر صدارت ہوا۔

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل نے اگست 2020 میں تعلقات معمول پر لانے پر اتفاق کیا تھا۔

متحدہ عرب امارات کا اسرائیلیوں کو سیاحتی ویزا دینےکا اعلان

دونوں ممالک کے وفود پہلے ہی سرمایہ کاری، سیاحت، براہ راست پروازوں، سیکیورٹی، ٹیلی مواصلات، ٹیکنالوجی، توانائی، صحت، نگہداشت، ثقافت، ماحولیات، باہمی سفارتخانوں کے قیام اور باہمی مفاد کے دیگر شعبوں سے متعلق دوطرفہ معاہدوں پر دستخط کر چکے ہیں۔

دو ماہ قبل متحدہ عرب امارات نے اسرائیلی شہریوں کے لیے سیاحتی ویزا دینے کا اعلان کیا تھا۔

اماراتی شہزادہ، اسرائیلی وزیراعظم نوبل امن انعام کیلئے نامزد

واضح رہے کہ مصر اور اردن کے بعد متحدہ عرب امارات تیسرا عرب ملک تھا جس نے اسرائیل کے ساتھ تعلقات معمول کی سطح پر لانے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعدبحرین اور صوڈان نے بھی اسرائیل سے تعلقات بحال کرنے کا اعلان کیا تھا۔

متحدہ عرب امارات نے 13 اگست 2020 کو اسرائیل کے ساتھ معمول کے سفارتی تعلقات استوار کرنے کے لیے معاہدے کا اعلان کیا تھا۔ بعد ازاں 15 ستمبر کو یو اے ای کے وزیرخارجہ شیخ عبداللہ بن زاید آل نہیان اور بنیامین نیتن یاہو نے وائٹ ہاؤس میں امریکا کی ثالثی میں طے پانے والے معاہدے پر دستخط کیے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube