Wednesday, January 20, 2021  | 5 Jamadilakhir, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

قرہ باغ جنگ میں آذربائیجان کے 2783 فوجی ہلاک ہوئے

SAMAA | - Posted: Dec 3, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Dec 3, 2020 | Last Updated: 2 months ago

آذربائیجان نے قرہ باغ جنگ میں جانی نقصان کی اعداد و شمار جاری کردی ہیں جس کے مطابق اس کے 2783 فوجی اہلکار ہلاک اور 100 سے زیادہ لاپتہ ہیں۔

ارمینیا اور آزربائیجان کے مابین 27 ستمبر کو جنگ چھڑگئی تھی جو 10 نومبر کو سیز فائر معاہدے کے تحت اختتام کو پہنچی۔ معاہدے کے تحت ارمینیا نے 1992 کی جنگ میں قبضہ کیے گئے تمام سات اضلاع آذربائیجان کے حوالے کردیے جبکہ قرہ باغ میں روس کا امن مشن تعینات کردیا گیا۔

ارمینیا کی جانب سے جنگ کے دوران بھی جانی نقصان کی تعداد سامنے آتی رہی مگر 14 نومبر کو جاری ہونے والی سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس کے 2317 فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔

دونوں جانب سے فوجی ہلاکتوں کے علاوہ 100 سے زائد عام شہری بھی جاں بحق ہوئے ہیں۔

قرہ باغ آذربائیجان کا ایک خود مختار علاقہ ہے جس میں آرمینائی باشندوں کی اکثریت ہے مگر 1992 میں انہوں نے آرمینیا کے ساتھ مل کر آذربائیجان کے ساتھ جنگ چھیڑ دی اور قرہ باغ سمیت دیگر 7 اضلاع پر بھی قبضہ کرلیا۔

یہ سات اضلاع خوبصورت پہاڑوں پر مشتمل اور قدرتی ذخائر سے مالامال ہیں۔ یہاں سونے کی کان سمیت دیگر معدنیات اور دریا اور ڈیم بھی ہیں۔

روس کی ثالثی میں 10 نومبر کو ہونے والے معاہدے کے تحت ارمینا نے تمام 7 اضلاع سے اپنی فوج واپس بلالی اور آذربائیجان کی فوج نے یہ علاقے اپنے کنٹرول میں لے لیے جبکہ قرہ باغ کے خود مختار علاقے میں روس کا امن مشن تعینات کیا گیا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube