Thursday, September 16, 2021  | 8 Safar, 1443

آرمینیاکی شکست، ویزاعظم سےاستعفیٰ کامطالبہ

SAMAA | - Posted: Nov 12, 2020 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 12, 2020 | Last Updated: 10 months ago

فوٹو: الجزیرہ

آذربائیجان سے شکست اور امن معاہدے پر آرمینیائی وزیراعظم کے دستخط کے بعد ملک بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے اور مظاہرین نے وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ کیا ہے۔

جرمن ویب سائٹ کے مطابق چھ ہفتوں کی خونریز جنگ کے بعد آذربائیجان اور آرمینیا میں مکمل جنگ بندی کا معاہدہ گزشتہ روز طے پایا، معاہدے کے بعد سے آزربائیجان میں جشن کا سماں ہے جبکہ آرمینیا میں شہری حکومت کے خلاف سڑکوں پر ہیں۔

Protesters in Armenia demand Pashinyan's resignation over Karabakh deal

آرمینیائی شہریوں نے معاہدے پر شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے پارلیمنٹ اور سرکاری عمارتوں کے باہر احتجاجی مظاہرے کیے ہیں جبکہ مشتعل افراد نے وزیراعظم ہاؤس کا گھیراؤ کرکے توڑ پھوڑ کی۔

معاہدے کے بعد سے مسلسل تیسرے روز بھی ملک بھر میں مظاہرے جاری ہیں۔

متنازع ریجن میں آرمینیا اورآزربائیجان کے درمیان دو روز قبل جنگ بندی ہوئی ہے۔ نگورنوکاراباخ میں جنگ بندی کی نگرانی کامشترکہ مرکزبنانے پرروس اور ترکی نے بھی معاہدے پر دستخط کردیے ہیں۔

دوسری جانب آذربائیجان کے مقبوضہ علاقے کاراباخ کے مرکزی شہر شوشا میں 28 سال بعد آذان کی دوبارہ صدائیں بلند ہوئیں ہیں۔

واضح رہے کہ آذربائیجان کے علاقے شوشا میں آرمینیا نے 1992 میں قبضہ کرلیا تھا اور مسلمانوں کو بے دخل کردیا تھا جبکہ مساجد ویران تھیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube