Thursday, September 16, 2021  | 8 Safar, 1443

آرمینیا نےمکمل جنگ بندی معاہدے پر دستخط کردیے

SAMAA | - Posted: Nov 10, 2020 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 10, 2020 | Last Updated: 10 months ago

فوٹو: ٹوئٹر

آرمینیا نے آذربائیجان کے ساتھ مکمل جنگ بندی معاہدے پر دستخط کردیے۔

دونوں ممالک کے مابین جاری جنگ میں آمینیائی افواج کو بھاری جنگی و جانی نقصان پہنچا جبکہ گزشتہ روز آذربائیجان نے نگورنو کاراباخ کے اہم علاقے شوشہ کا بھی کنٹرول حاصل کرنے کا دعویٰ کیا۔

آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان جنگی معاہدہ طے پانے کے بعد روس اور ترکی کی جانب مقبوضہ علاقے نگورنو کاراباخ ميں امن دستے تعينات کريں گے۔

معاہدہ طے پانے کے بعد آمینیائی افواج نگورنو کاراباخ کے بڑے حصے سے فوجی انخلاء پرراضی ہوگيا ہے۔آرمینیائی وزیراعظم نکول پشتيبان نے جنگ میں شکست کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنگ جاری رکھنا ممکن نہيں رہا یہ فیصلہ بہت بوجھل دل کے ساتھ کيا۔

آرمینیائی وزیراعظم کی اہلیہ جنہوں نے کچھ عرصہ قبل فوجی ٹریننگ کی تصاویر جاری کیں تھی اب انھوں نے عوامی ردعمل دیکھتے ہوئے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹ کيا صبر کريں۔

دوسری جانب جنگ میں آرمینیا کی جانب سے ہھتیار ڈالنے کے بعد آرمينيائی باشندوں کی وزيراعظم آفس ميں گھس کر توڑ پھوڑ کی جبکہ ايوان صدر اور ديگر سرکاری دفاتر کا گھيراؤ کرلیا ہے۔

آرمینیا اور آذربائیجان میں جنگ معاہدے پر ترکی اور روس کی جانب سے مسلسل کوششیں کی گئیں تھیں۔ بین الاقوامی عسکری تجزیہ نگار آرمینیا کے انخلا کو آذربائیجان کی فتح قراردے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان جنگ گزشتہ ماہ 27 ستمبر کو متنازعہ علاقے ناگورنوکاراباخ پر آرمينيا کے حملوں سے شروع ہوئی تھی۔ جس میں دونوں ملکوں کے سیکڑوں شہری مارے گئے جبکہ فوجیوں کا جانی نقصان بھی ہوا۔

یاد رہے کہ سن 1990 کی دہائی سے نگورنوکاراباخ کا علاقہ دونوں ممالک کے مابین کشیدگی کی بنیاد بنا ہوا ہے۔ یہ علاقہ عالمی سطح پر آذربائیجان کی ملکیت تسلیم کیا جاتا ہے تاہم یہ آرمینیائی نسل کے لوگوں کے کنٹرول میں تھا۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube