Wednesday, January 20, 2021  | 5 Jamadilakhir, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

چین کا اہم خلائی مشن چاند کی جانب روانہ

SAMAA | - Posted: Nov 24, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Nov 24, 2020 | Last Updated: 2 months ago

چین نےبغیرآدمی کےخلا میں مشن روانہ کیا ہےجس کامقصد چاند سےتحقیق کے لیے مواد لانا ہے۔گذشتہ چالیس برس میں پہلی بار چاند سے پتھراورمواد لانے کےلیے خلائی مشن کو بھیجا گیا ہے۔

منگل کو چین کے صوبے ہینان کے جنوبی جزیرے سے وین شانگ اسپیس سینٹر سے خلا میں چانگ فائیو نامی خلائی مشن بھیجا گیا۔لانگ مارچ فائیو راکٹ کو چین کے مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے4 بجے روانہ کیاگیا۔

اس خلائی مشن کا مقصد چاند سے پتھر اورمٹی لانا ہے تاکہ  سائنس دان چاند کی تاریخ سمیت اس کی ساخت اور اس کی سطح پر بننے والے آتش فشاں کےحوالےسے جان سکیں۔

اس خلائی مشن کوتین سال قبل روانہ ہونا تھا تاہم لانگ مارچ فائیو راکٹ کے انجن میں خرابی کے باعث اس میں تاخیر ہوئی۔ اگر یہ خلائی مشن کامیاب ہوگیا،تو امریکا اور روس کے بعد چین تیسرا ملک ہوگا جو چاند سے پتھر اور دیگر نمونے لاسکے گا۔

چین کا خلائی مشن چاند کے سطح سے اوشنس پروسیلرم کے مقام  سے تقریبا 2 کلو مٹی اور پتھر لائے گا۔ سائنس جرنل نیچر کےمطابق یہ مواد لاوا کے باقی رہ جانے والے پتھروں پر مشتمل ہوگا۔ اس مقام تک پہلا کبھی کوئی نہیں گیا تھا۔

چینی خلائی مشن نومبر کے آخری دنوں میں چاند پر اترے گا۔ خلائی مشن ایک قمری دن میں چاند پر یہ کام مکمل کرےگا،ایک قمری دن زمین کے 14 دن پر مشتمل ہے۔

ناسا کےمطابق دسمبر کے اوائل میں ایک خصوصی کیپسول میں چین کے علاقے منگولیا میں چاند سے لایا جائے گیا یہ مواد لینڈ کرے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube