Wednesday, December 2, 2020  | 15 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

ریپ کے بعد قتل ہونے والی خاتون سائنسدان کاقاتل گرفتار

SAMAA | - Posted: Oct 14, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 14, 2020 | Last Updated: 2 months ago

فوٹو: اے ایف پی

یونانی کسان نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے امریکی خاتون سائنسدان سوزن ایٹن کو ریپ کے بعد قتل کیا تھا۔

سوزن ایٹن ایک عالمی شہرت یافتہ مالیکیولر بیالوجسٹ تھیں اور ملزم کے بقول ریپ اور قتل کے وقت اس پر ’’جن قابض تھے‘‘۔

یہ واقعہ گزشتہ سال 2جولائی کو یونانی جزیرے کریٹے کے ساحلی شہر چانیا کے نواح میں پیش آیا تھا۔ مقتولہ سائنسدان سوزن ایٹن جرمنی کے شہر ڈریسڈن کی یونیورسٹی کے ماکس پلانک انسٹیٹیوٹ کی محققہ تھیں اور وہ چھٹیاں گزارنے کے لیے اس یونانی جزیرے پر گئی تھیں۔

کریٹے جزیرے کے شہر ریتِھمنو میں مقدمے کی سماعت کے دوران پولیس نے عدالت کو بتایا کہ 59 سالہ امریکی خاتون کا مبینہ قاتل ایک مقامی کسان ہے جس نے اعتراف جرم کرلیا ہے تاہم اس نے دعویٰ کیا ہے کہ اس وقت وہ آپے میں نہیں تھا اور اس پر ’’جنوں نے قبضہ‘‘ کر رکھا تھا۔

پولیس نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نے اپنے جرم کا چند گھنٹوں کی تفتیش کے دوران ہی اعتراف کرلیا تھا۔ ملزم کا نام یانِس پاراس کاکِس ہے، جو شادی شدہ اور دو بچوں کا باپ ہے جبکہ ملزم کی عمر 28 سال ہے اور وہ ایک پادری کا بیٹا ہے۔

یاد رہے کہ ملزم پاراس کاکِس پر قتل، ریپ سمیت غیر قانونی ہتھیار رکھنے کے الزامات ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube