Monday, October 19, 2020  | 1 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

کشمیریوں کو چین قبول ہے، بھارت نہیں، فاروق عبداللہ

SAMAA | - Posted: Sep 24, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 24, 2020 | Last Updated: 4 weeks ago

بھارت بند کردو، ماردو پر عمل پیرا ہے

مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ 5 اگست 2019 کے بعد کشمیری عوام خود کو بھارت کا حصہ نہیں سمجھتے۔ بھارت سے جان چھڑانے کیلئے عوام چینی حکومت کو بھی قبول کرنے کو تیار ہیں۔

واضح رہے کہ فاروق عبداللہ بھارت نواز موقف کے حامی رہے ہیں جس کی وجہ سے وہ مقبوضہ کشمیر بھارت کے مسلط کردہ وزیراعلیٰ بھی رہے مگر بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کیے جانے کے بعد وہ بھی بھارت مخالف ہوگئے ہیں۔

حال ہی میں ایک بھارتی صحافی کو دیے گئے انٹرویو کے دوران فاروق عبداللہ نے کہا کہ پانچ اگست 2019 کو انڈیا نے جو کچھ کیا، اِس نے بھارت کے تابوت میں آخری کیل ٹھونک دی۔ کشمیری اب خود کو بھارت کا حصہ نہیں سمجھتے۔

فاروق عبداللہ نے کہا کہ آج چین دوسری جانب سے آگے بڑھ رہا ہے۔ بہت سے لوگ بات کرتے ہیں کہ چینی آرہے ہیں۔ میں دیانتداری سے وہ بات بتارہا ہوں جو کوئی یہاں سننا نہیں چاہتا۔ یہ کہ کشمیری (مسلمان) چینیوں کوبھارتی حکومت پرترجیح دیتے ہیں۔

انہوں نے یہ انکشاف بھی کیا کہ مودی سرکار لداخ میں بدھ مت کے پیروکاروں کو بھی ہندو بنانے پر کام کر رہی ہے۔

فاروق عبداللہ کے بقول ہم لوگوں کو شک ہورہا ہے کہ یہ سیٹیں بڑھا کر یہ دکھانا چاہتے ہیں کہ مسلم اکثریت کو یہ کیسے کاؤنٹر کریں۔ یہ چاہتے ہیں کہ دکھائیں کہ مسلم اکثریت نہیں رہی۔ مصیبتوں میں ڈالیں گے تو کیا وہ ان کا نام لے گا۔ کیا وہ یہ نہیں سمجھے گا کہ بہتر ہے کہ چین ہی جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم غلام بیٹھے ہیں وہاں پر، غلام، مکمل طور پر غلام۔ آواز نہیں اُٹھا سکتے۔ بند کردیں گے، گولی مار دیں گے۔ یہی تو انگریزوں نے بھی کیا تھا۔ ہمارے بھی کچھ زر خرید لے لیں گے یہ لیکن چلے گا نہیں۔

فاروق عبد اللہ نے قائد اعظم محمد علی جناح  کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جب نہرو نے جناح کو متحدہ ہندوستان کے وزیر اعظم بننے کی پیشکش کی تو انہوں نے انکار کردیا تھا۔ اُنہیں پتا تھا کہ ہندو انہیں قبول نہیں کریں گے اور چند دن بعد انہیں نکال باہر کریں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube