Sunday, November 28, 2021  | 22 Rabiulakhir, 1443

روس کا ایران کیساتھ فوجی تعلقات فروغ دینے کا اعلان

SAMAA | - Posted: Sep 22, 2020 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Sep 22, 2020 | Last Updated: 1 year ago

روس نے اعلان کیا ہے کہ اگلے ماہ ایران پر اقوام متحدہ کے اسلحہ کی پابندی ختم ہونے کے بعد وہ تہران کے ساتھ فوجی تعاون کو فروغ دے گا۔

روس کے نائب وزیر خارجہ سیرگئی ریاکوف نے انٹرفیکس نیوز ایجنسی کو بتایا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کے ذریعے ایران پر عائد پابندیاں 18 اکتوبر کو ختم ہوں گی۔ اس کے بعد ایران کے ساتھ ہمارے تعاون میں نئے مواقع پیدا ہوں گے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایران کے ساتھ فوجی تعلقات قائم کریں گے۔

دوسری جانب امریکا نے ایران پر نئی پابندیوں کا اعلان کرتے ہوئے یہ دعویٰ کیا ہے کہ وہ اقوام متحدہ کی جانب سے عائد پابندی کا اطلاق کر رہا ہے۔

ٹرمپ انتظامیہ نے پیر کو 27 افراد اور اداروں پر پابندیاں عائد کی ہیں جن میں ایرانی وزارت دفاع کے اہلکار، ایٹمی سائنس دان، ایران کے جوہری توانائی تنظیم اور کاورباری افراد بھی شامل ہیں۔

پابندیوں کا اعلان کرتے ہوئے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا کہ برطانیہ، فرانس اور جرمنی کو نہ صرف ان پابندیوں کی حمایت کرنا ہوگی بلکہ ان پر عمل درآمد بھی کرانا ہوگا۔

لیکن اقوام متحدہ نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ یہ فیصلہ واشنگٹن کا اختیار نہیں ہے جبکہ یورپی ممالکت نے متنبہ کیا ہے کا امریکا کو ایسا کرنے کا قانونی اختیار حاصل نہیں ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ نے اعلان کیا کہ ایران پر اقوام متحدہ کے اسلحے کی پابندی اب غیر معینہ مدت کے لئے دوبارہ نافذ کردی گئی ہے اور ہم اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ پابندی اس وقت تک برقرار رہے گی جب تک ایران اپنا طرز عمل تبدیل نہ کرے۔

نوٹ: یہ ایک ڈیولپنگ اسٹوری ہے۔ تفصیلات درج کی جائیں گی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube