Saturday, October 31, 2020  | 13 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

کابل: نائب صدر کے قافلے پر خود کش حملہ

SAMAA | - Posted: Sep 9, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 9, 2020 | Last Updated: 2 months ago

بشکریہ اے ایف پی

افغان دارالحکومت کابل میں نائب صدر خود کش حملے میں زخمی ہوگئے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق افغانستان کے نائب صدر امیر االلہ صالح بدھ 9 ستمبر کو ہونے والے خود کش حملے میں زخمی ہوگئے۔ رپورٹ کے مطابق بدھ کی صبح افغان نائب صدر اپنے قافلے کے ہمراہ روانہ ہوئے تو موٹر سائیکل سوار خود کش حملہ آور نے قافلے میں موجود گاڑی سے ٹکرا گیا۔

خود کش حملے میں قافلے میں موجود 6 افراد جاں بحق، جب کہ درجنوں زخمی ہوئے۔ سماجی رابطے کی سائٹ فیس بک پر جاری ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ نائب صدر کے بازؤں پر دھماکے کے بعد پٹی بندھی ہوئی ہے۔ حملے میں انہیں معمولی زخمی آئے۔ وہ اپنی رہائش گاہ سے دفتر کی جانب جا رہے تھے۔

حملے کے بعد میڈیا سے گفتگو میں امیر اللہ صالح کا کہنا تھا کہ خود کش حملے میں میرے کچھ محافظ شدید زخمی ہوئے ہیں، تاہم میں اور گاڑی میں میرے ساتھ موجود میرا بیٹا محفوظ رہے ہیں، ہمیں معمولی نوعیت کے زخمی آئے ہیں۔ دھماکے سے ہاتھوں اور چہرے پر کچھ جلنے سے زخمی آئے۔

بشکریہ اے ایف پی

دھماکے سے متعلق انہوں نے بتایا کہ دھماکا بہت شدید تھا۔ وزارت صحت کے ترجمان کے مطابق 6 لاشیں اور 12 زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کی جانب سے دھماکے سے لاتعلقی کا اعلان کیا گیا ہے۔ دھماکے سے متاثر ہونے والے دکاندار کا کہنا تھا کہ خودکش حملہ اتنا شدید تھا کہ اس سے دکان کی کھڑکیاں تباہ ہوگئیں۔ جائے وقوعہ کے قریب موجود گیس سلنڈر کی دکان بھی اس کی زد میں آگئی اور دکان میں موجود سلنڈر بھی آگ سے پھٹ گئے۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ افغانستان میں نائب صدر کا عہدہ دو لوگوں کے پاس ہے۔ امیر اللہ صالح اور سروار دانش نائب صدور ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube