Monday, October 26, 2020  | 8 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

اسرائیلی وفد تجارتی معاہدوں کیلئے امارات پہنچ گیا

SAMAA | - Posted: Sep 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 8, 2020 | Last Updated: 2 months ago

اسرائیل کے سب سے بڑے بینک کے سی ای او سمیت اسرائیل کا پہلا تجارتی وفد منگل کو متحدہ عرب امارات پہنچ گیا جہاں وہ اماراتی بینکوں سمیت دیگر کاروباری اداروں کے ساتھ معاہدے کریں گا۔

عرب نشریاتی ادارے العربیہ کے مطابق اسرائیل کے سب سے بڑے بینک ’ہاپوالیم’ کے سربراہ ڈوڈ کوٹلر دبئی پہنچے ہیں اور وہ متحدہ عرب امارات کے سرکاری عہدیداروں اور سب سے بڑے بینکوں کے سربراہوں سے ملیں گے۔

ڈوڈ کوٹلر نے خبر رساں ادارے کو بتایا کہ ’یہ دورہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے کاروباری اور مالیاتی اداروں کے مابین معاشی تعلقات اور تعاون بڑھانے کا سنہرا موقع ہے اور یہ تعلقات دونوں ممالک کی معاشی ترقی میں اہم کردار ادا کریں گے۔

متحدہ عرب امارات کے سب سے بڑے بینک ’فرسٹ ابو ظہبی بینک‘ نے گذشتہ ہفتے ٹوئٹر پر اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین گذشتہ ماہ ہونے والے تاریخی معاہدے کے بعد اسرائیل کے معروف مالیاتی اداروں بینک ہاپولیئم اور بینک لومی کے ساتھ بات چیت کا آغاز کرے گا۔

اس دورے سے قبل یکم ستمبر کو دونوں ممالک کے درمیان بینکاری اور مالیات سے متعلق مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوئے ہیں۔ اگلے پیر کو اسرائیل کے ایک اور اہم بینک ’بینک لومی‘ کا دوسرا وفد متحدہ عرب امارات کا دورہ کرے گا۔ بینک ہاپوالیم اسرائیل کا سب سے بڑا بینک جبکہ اور بینک لومی دوسرے نمبر پر ہے۔

اسرائیلی وزیر انٹلیجنس ایلی کوہن نے گزشتہ روز کہا تھا کہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین سالانہ تجارت 4 ارب ڈالر تک پہنچنے کی توقع ہے۔

متحدہ عرب امارات نے 29 اگست کو اسرائیل کا معاشی بائیکاٹ کرنے کا حکم جاری کرتے ہوئے اس سلسلے میں ماضی میں کی گئی قانون سازی کالعدم قرار دی تھی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube