Tuesday, September 29, 2020  | 10 Safar, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

دھماکوں سےمتاثرہ بیروت آفت زدہ شہرقرار

SAMAA | - Posted: Aug 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago

بشکریہ اے ایف پی

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں منگل کی شام ہونے والے خوفناک دھماکوں کے بعد ملک کی سپریم ڈیفنس کونسل نے ہنگامی حالت کا اعلان کیا ہے۔

سپریم ڈیفنس کونسل کی طرف سے منگل اور بدھ کی درمیانی شب جاری ایک بیان میں‌ کہا گیا ہے کہ دھماکوں کے بعد دارالحکومت بیروت میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔ جب کہ ایوان صدر کی طرف سے جاری ایک بیان میں بیروت کو آفت زدہ شہر قرار دیا ہے۔

مسلح‌ افواج نے صورت حال پر قابو پانے کے لیے کرائسز سیل قائم کیا ہے اور دارالحکومت میں سیکیورٹی کی صورت حال کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے سیکیورٹی کی تعداد بڑھا دی گئی ہے۔

لبنانی وزیراعظم نے کہا ہے کہ یہ ناقابل قبول ہے کہ ویئر ہاؤس میں 2750 ٹن امونیم نائٹریٹ موجود تھا۔ انھوں نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر پیغام میں لکھا کہ ’میں تب تک چین سے نہیں بیٹھوں گا جب تک مجھے اس واقعے کے ذمہ دار کا نہ پتہ چل جائے تاکہ اس کا محاسبہ کیا جائے اوبر بہت سخت سزا دی جائے۔‘اس سے قبل لبنان کے سکیورٹی چیف نے کہا تھا کہ یہ دھماکا اس علاقے میں ہوا ہے جہاں بڑی تعداد میں بارودی مواد موجود تھا۔

ذرائع کے مطابق یہ دھماکا شہر میں بندرگاہ والے علاقے میں ہوا تاہم اس دھماکے کی فوری طور پر وجوہات سامنے نہیں آئیں۔ جائے وقوعہ سے سامنے آنے والی ویڈیوز میں دھماکے سے پہلے آگ اور دھویں کے بادل اٹھتے ہوئے دیکھے جا سکتے ہیں۔

عربی خبر رساں ادارے کی جانب سے یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ بیروت میں‌ ہونے والے خوفناک بم دھماکے کے بارے میں یہ اطلاعات ملی ہیں کہ یہ دھماکا ایرانی حمایت یافتہ لبنانی تنظیم حزب اللہ کے ایک اسلحہ گودام میں ہوا ہے۔

لبنان کے ڈائریکٹر برائے جنرل سیکیورٹی عباس ابراہیم نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ دھماکے کی شدت سے اندازہ ہوتا ہے کہ اس کیلئے استعمال ہونے والا مواد باہر سے وہاں لایا گیا تھا۔

اس سے قبل لبنان کے سکیورٹی چیف کا کہنا ہے کہ یہ دھماکا اس علاقے میں ہوا ہے جہاں بڑی تعداد میں بارودی مواد موجود تھا۔ حکام کا الزام ہے کہ یہ مواد چھ سال سے یہاں پڑا ہوا تھا۔

بشکریہ اے ایف پی

دوسری جانب صدر مشیل ایون نے دھماکے کے بعد کی صورتِ حال کا جائزہ لینے کے لیے کابینہ کا ہنگامی اجلاس بلایا، جس نے صورت حال پر قابو پانے کے لئے فوج کو مکمل اختیارات دے دیئے ہیں۔

بشکریہ اے ایف پی

حکام کا کہنا ہے کہ ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ہے جب کہ ریسکیو ورکرز دھماکے میں زخمی ہونے والوں کی تلاش میں مصروف ہیں۔ بیروت میں امریکا کے سفارت خانے نے لوگوں پر زور دیا ہے کہ وہ اپنے گھروں میں رہیں کیوں کہ دھماکے سے زہریلی گیسوں کے اخراج کی بھی اطلاعات ہیں

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube