Monday, August 10, 2020  | 19 Zilhaj, 1441
ہوم   > بین الاقوامی

مجسمے گرانے پر مشتعل ٹرمپ نے نیا منصوبہ شروع کردیا

SAMAA | - Posted: Jul 4, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jul 4, 2020 | Last Updated: 1 month ago

مظاہرین کی جانب سے متنازع تاریخی شخصیات کے مجسمے توڑنے کے بعد مشتعل ٹرمپ نے ‘نیشنل گارڈن آف امریکن ہیروز’ بنانے کا حکم دیا ہے جس میں ان تمام شخصیات کے مجسمے نصب کیے جائیں گے۔

ٹرمپ نے پروجیکٹ کیلئے ٹاسک فورس تشکیل دیتے ہوئے اس کو 60 دن میں مکمل منصوبہ پیش کرنے اور جگہ کے تعین کا ٹاسک دیا ہے جبکہ اس بات پر بھی زور دیا ہے کہ یہ مجسمے حقیقی زندگی کے قریب ہونے چاہئیں، جدت پسندانہ ہونے کی ضرورت نہیں۔

مئی میں پولیس نے غیر مسلح سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کو قتل کیا تھا جس کے بعد امریکا بھر میں احتجاجی مظاہرے ہوئے اور مظاہرین نے متعدد تاریخی امریکی شخصیات کے مجسمے توڑے۔

مظاہرین نے خاص طور پر ان شخصیات کے مجسموں کو نشانہ بنایا جنہوں نے غلامی کو فروغ دیا اور امریکی سول وار میں خون بہایا۔

دوسری جانب ٹرمپ نے ان علامتوں کا دفاع کرتے ہوئے اسے امریکی ورثے کا ایک حصہ قرار دیا ہے۔ ٹرمپ نے متعدد مرتبہ مجسمے گرانے والے مظاہرین کی مذمت بھی کی ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ “نیشنل گارڈن آف امریکن ہیروز” شہر کے قریب کسی خوبصورت مقام پر قائم کرکے 4 جولائی 2026 تک عوام کیلئے کھول دیا جائے گا۔

انہوں نے ریاستی حکام اور شہری تنظیموں سے اس کے لئے مجسمے عطیہ کرنے کی اپیل کی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube